پاکستانی عوام نے اعتراض اٹھادیا، حیرت انگیز تبصرے“

”قائد کا نام استعمال کرنے کی اجازت نہیں ہونی چاہیے، نئی نجی ائیر لائن کا نام فلائی جناح رکھنے پر پاکستانی عوام نے اعتراض اٹھادیا، حیرت انگیز تبصرے“

کراچی(این این آئی)پاکستان کے مقامی کاروباری گروپ لیکسن اور متحدہ عرب امارات کے ایئر عربیہ گروپ نے پاکستان کی “سب سے پہلی” سستی ایئرلائن “فلائی جناح” کے نام سے شروع کرنے کا اعلان کیا ہے۔اگرچہ وزیر اعظم اور حکومت سے منسلک دیگر ہائی پروفائل مشیروں نے اس پیش رفت کا خیرمقدم کیا ہے، لیکن ایئرلائن کے لیے بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح کا نام استعمال کرنے پر عوام نے اعتراض اٹھادیاہے۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹرپرمصدق ذوالقرنین نے لکھاکہ قائد کا نام استعمال کرنے کی اجازت نہیں ہونی چاہیے۔ ایس ای سی پی کے ممنوعہ ناموں کی فہرست کے تحت،مشہور/ممتاز شخصیات کے نام صرف مجاز اتھارٹی کی اجازت سے استعمال کیے جا سکتے ہیں۔ جناح کو کسی بھی تجارتی منصوبے کے نام پر استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جانی چاہیے۔ایک اور صارف نے مہاجر صوبے کا زکر کرتے ہوئے لکھاکہ جناح انٹرنیشنل، فلائی جناح، جناح فلائی اوور، جناح پارک سب ہی ہوگیا۔ اب صرف ایک چیز رہ گئی ہے جناح پور۔عمر قریشی نے لکھاکہ ایک ایئرلائن کے لیے جناح فلائی کا نام، کوئی اس کے خلاف پٹیشن دائر کرے گا اور اگر ایسا ہوا تو عدالتیں کیسے جواب دیں گی۔جس پر مرتضی سولنگی نے کہاکہ یہاں ایک سڑک، ایک ہوائی اڈہ، اسٹیڈیم اور اسی نام کا ایک اخبار پہلے سے موجود ہے، تو ایک ایئر لائن کیوں نہیں؟،شاکر حسین نے سوال کیاکہ جناح کولا کب شروع ہو رہا ہے؟ شاید کوئی جناح گٹکا؟ ایک صابن؟ امید ہے کہ کسی کو برانڈکا نام سوچنے کے لیے ادائیگی نہیں کی گئی ہوگی۔ایئر عربیہ گروپ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق نئی ایئرلائن لیکسن گروپ اور ایئر عربیہ کا مشترکہ پراجیکٹ ہوگا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ فلائی جناح پاکستان سے مقامی اور بین الاقوامی روٹس پر مسافروں کو خدمات فراہم کرے گا۔ لیکسن گروپ کے چیئرمین اقبال علی لاکھانی نے کہاکہ ہم ایئر عربیہ کے ساتھ پاکستان کی نئی سستی ایئرلائن شروع کرنے پر پرجوش ہیں۔ فلائی جناح پاکستان کی ٹریول اور ٹورازم انڈسٹری کی خدمت کرے گی اور ملک کی معیشت میں اہم کردار ادا کرے گی۔انہوں نے کہا کہ یہ شراکت داری پاکستان کے ایئر ٹرانسپورٹ سیکٹر کی ترقی کو سپورٹ کرے گی۔ ایئر عربیہ کا ٹریک ریکارڈ بہت اچھا ہے اور ہم نئی ایئر لائن کو شروع کرنے کے لیے کام کر رہے ہیں۔ایئر عربیہ کے چیئرمین شیخ عبداللہ بن محمد الثانی نے کہا کہ ہم لیکسن گروپ کے ساتھ مل کر پاکستان کی نئی سستی ایئر لائن شروع پر خوش ہیں۔ ہمیں اعتماد ہے کہ فلائی جناح پاکستان کے ایئر ٹرانسپورٹ سیکٹر میں اچھا اضافہ کرے گی، اور اس سے نوکریاں پیدا ہوں گی اور سیاحت میں بہتری آئے گی۔ہم لیکسن گروپ اور حکومت پاکستان کے اعتماد کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔فلائی جناح ابتدا میں کراچی سے آپریٹ کرے گی اور پاکستان میں مختلف روٹس پر اپنی سروس فراہم کرے گی۔ ایئرلائن بعد میں انٹرنیشنل پروازیں بھی شروع کرے گی۔ایئر لائن کو جلد ہی ایئر آپریٹنگ سرٹیفکیٹ مل جائے گا۔ لانچ کی تاریخ اور دیگر تفصیلات کا اعلان بھی کیا جائے گا۔واضح رہے کہ فلائی جناح، سیرین ایئر اور ائیرسیال میں پاکستان کے آسمان پر پرواز کرنے والے نجی ایئر لائنز کے گروپ میں شامل ہوجائے گی۔ جبکہ ایئر بلیو نجی شعبے کی سب سے پرانی ایئر لائن ہے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *