نئی حکومت کے لئے بڑا چیلنج بن گیا

”آزاد کشمیر میں سرکاری و پرائیویٹ جائیدادوں پر قبضہ تحریک انصاف کی نئی حکومت کے لئے بڑا چیلنج بن گیا“

اسلام آباد (آن لائن ) آزاد کشمیر سرکاری و پرائیویٹ جائیدادوں پر قبضہ جات تحریک انصاف کی نئی حکومت کے لئے بڑا چیلنج ہے۔ جبکہ سینکڑوں تارکین وطن کی جائیدادوں پر بااثر شخصیات کے غیر قانونی قبضے اورمداخلت پر مقامی انتظامیہ بے بس نظر آرہی ہے۔مختلف اضلاع میں با اثر شخصیات ، مظبوط گروہوں سے زمینیں واگزار کرانے کی درخواست ایکشن کی منتظرہیں۔ پی ٹی آئی کا منشور احتساب اور کرپشن سے پاک ملک کا خواب آزاد کشمیر میں چکنا چور ہوتا ہوا دکھائی دے رہا ہے تفصیلات کے مطابق آزاد کشمیر میں سرکاری اور نجی جائیدادوں پر بااثر شخصیات اورمختلف اداروں نے کئی برس سے قبضے جمائے ہوئے ہیں جبکہ ان با اثر شخصیات کے سامنے مختلف اضلاع کی مقامی انتظامیہ بے بس نظر آ رہی ہے تحریک انصاف کے منشور احتساب اور کرپشن سے پاک ملک کا خواب چکنا چور ہوتا دکھائی دے رہا ہے ایک زرائع کے مطابق آزاد کشمیر بھر میں مقبوضہ جائے دواں کے مالکان کا تعلق اوورسیز کمیونٹی سے ہے جو کہ ایک طویل عرصہ سے دیار غیر میں مقیم ہیں ، نصف درجن جائیدادوں اور املاک پر فلاحی اداروں کی طرف سے بھی غیر قانونی مداخلت و قبضہ جات شامل ہیں جو کہ ابتدائی طور پر کرایہ کی غرض سے لیں گئی اور بعد ازاں قبضے کر لئے گیے اس کہ اوورسیز پاکستانی فاونڈیشن کے شکایت سیل کی وساطت کے انسپیکٹر جنرل آف پولیس کو موصول ہو کی ہیں۔ زرائع مطابق قبضہ مافیا اتنا مظبوط اور با اثر شخصیت کی چھتری میں کام کر رہا ہے کہ شریف آدمی ان کے شر سے دور بھاگتا ہے ، ان کیسز کی شرع مظفرآباد اور باغ میں بہت زیادہ ہے جبکہ دیگر اضلاع میں بھی اسطرح کی کیسز انتظامیہ کے زیرر کار جس پر عملدرآمد نہیں رہا جبکہ موجودہ حکومت کے وجود میں آتے ہی احتساب کے عملدرامد کی گردش کرنے والی خبروں اور وزیر اعظم آزاد کشمیر کا عام آدمی کو انصاف دینے کے اعلان نے مقبوضہ جائدادوں کے مالکان کے لئے ایک امید کی کرنا ہے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *