سراج حقانی داخلہ، ملا یعقوب وزیر دفاع مقرر

طالبا-ن حکومت کا اعلان ، ملا حسن اخند سربراہ، عبدالغنی برادر نائب، امیر متقی خارجہ، سراج حقانی داخلہ، ملا یعقوب وزیر دفاع مقرر

کابل (ڈیلی پاکستان آن لائن)افغان ط-البان کی جانب سے افغانستان کی نئی عبوری حکومت کا اعلان کردیا گیا ہے۔ ملا حسن اخند کو نئی حکومت کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے جب کہ ملا عبدالغنی برادر ان کے نائب ہوں گے۔ طا-لبان نے سربراہِ حکومت سمیت مجموعی طور پر 33 رکنی کابینہ کا اعلان کیا ہے جس میں آئندہ چند روز میں مزید اضافہ بھی کیا جائے گا۔ط-البان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے ایک پریس کانفرنس میں افغانستان کی نئی حکومت کے قیام کا اعلان کیا۔ انہوں نے بتایا کہ نئی افغان حکومت کے سربراہ ملا محمد حسن اخند ہونگے۔ وہ ملا عمر کے انتہائی قریبی ساتھیوں میں سے ایک ہیں اور اس سے پہلے طا-لبان کی شوریٰ کے سربراہ کے طور پر خدمات سرانجام دے رہے تھے۔ وہ ان چار لوگوں میں شامل ہیں جنہوں نے تحریک طا-لبان کی بنیاد رکھی تھی۔ قطر میں طا-لبان کے سیاسی دفتر کے سربراہ ملاعبدالغنی برادر کو حکومت کا نائب سربراہ مقرر کیا گیاہے۔ ان کے ساتھ مولوی عبدالسلام حنفی بھی حکومت کے نائب سربراہ ہوں گے۔اس کے علاوہ حقانی نیٹ ورک کے سربراہ سراج حقانی کو وزیر داخلہ جبکہ اسد الدین حقانی کو نائب وزیر داخلہ مقرر کیا گیا ہے۔ طال-بان کے شریک بانی ملا عمر کے صاحبزادے اور طا-لبان کے ملٹری کمیشن کے سربراہ ملا محمد یعقوب کو افغانستان کا وزیر دفاع جب کہ ملا فضل اخوند کو آرمی چیف تعینات کیا گیا ہے۔ملا عبدالحق وثیق خفیہ ایجنسی نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سیکیورٹی (این ڈی ایس) کے سربراہ ہوں گے۔طا-لبان کی حکومت میں ملا امیر خان متقی کو وزیر خارجہ جب کہ قطر میں طال-بان کے سیاسی دفتر کے نائب شیر محمد عباس ستانکزئی کو نائب وزیر خارجہ بنایا گیا ہے۔ ہدایت اللہ بدری وزیر خزانہ ہوں گے۔ شیخ خالد کو دعوت و ارشادات ،ملا ہدایت اللہ کو ماحولیات،شیخ اللہ منیر کو تعلیم، ملا خیر اللہ خیر خواہ کو وزارت اطلاعات کی ذمہ داریاں دی گئی ہیں، طال-بان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کو ان کا معاون مقرر کیا گیا ہے۔ طال-بان نے مولوی عبدالحکیم کو عدالتوں (وزیر قانون)کا سربراہ مقرر کیا ہے جب کہ خلیل الرحمان حقانی وزیر برائے تارکین وطن ہوں گے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *