حق میں آواز بلند کرنےکا حق ہے

کشمیر اور بھارت سمیت کہیں بھی مسلمانوں کے حق میں آواز بلند کرنےکا حق ہے، افغان طا-لبان

کابل ( 2021) کشمیر اور بھارت سمیت کہیں بھی مسلمانوں کے حق میں آواز بلند کرنےکا حق رکھتے ہیں، افغان طال-بان نے دو ٹوک اعلان کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق افغان طال-بان کا کہنا ہےکہ انہیں کشمیر سمیت کہیں بھی مسلمانوں کے حق میں آواز بلند کرنےکا حق ہے۔یہ بات قطر میں طا-بان کے سیاسی دفتر کے ترجمان برائے بین الاقوامی میڈیا سہیل شاہین نے برطانوی نشریاتی ادارے کے ساتھ زوم پر انٹرویو میں کہی ہے۔طا-لبان ترجمان سہیل شاہین کا کہنا تھا کہ ہماری کسی بھی ملک کےخلاف مسلح آپریشن کرنےکی کوئی پالیسی نہیں ہے۔سہیل شاہین کا کہنا تھا کہ مسلمان ہونےکےناطے یہ ہمارا حق ہے کہ کشمیر، بھارت یا کسی بھی ملککےمسلمانوں کے لیے آواز اٹھائیں۔ایک سوال کے جواب میں ط-البان ترجمان کا کہنا تھا کہ حقانی کوئی گروپ نہیں، وہ افغانستان کی اسلامی امارت کا حصہ ہیں۔اس سے قبل طا-لبان کے رہنما اور قطر میں مذاکرات کرنے والی ٹیم کے رکن شہاب الدین دلاور نے کہا تھا کہ امارت اسلامی افغانستان میں سب کو نمائندگی دی جائے گی۔بھارت جلد ہی جان جائے گا کہ طال-بان باآسانی حکومتی امور چلا سکتے ہیں۔ طا-لبان رہنما نے خبردار کیا ہے کہ وہ افغانستان کے اندرونی معاملات میں داخل اندازی نہ کرے۔پاکستان ہمارا ہمسایہ اور دوست ملک ہے۔انہوں نے 30 لاکھ افغان پناہ گزینوں کی میزبانی کرنے پر پاکستان سے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا کہ ہم پناہ گزینوں کی فلاح بہبود کے لیے خدمات کی فراہمی پر پاکستان کے شکر گزار ہیں۔شہباب الدین دلاور نے کہا ہے کہ ط-البان تمام ممالک کے ساتھ دو طرفہ احترام کی بنیاد پر امن تعلقات کے خواہاں ہیں۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ افغانوں نے ملک کو تقسیم کرنے اور تباہ کن جنگ میں مبتلا ہونے کی ساشوں کو ناکام بنا دیا ہے۔ دریں اثنا لویہ جرگہ سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا افغانوں نے کسی کے بھی سامنے نہ جھکنے کی تاریخ دہرائی ہے اور عالمی سپرپاور اور اس کی اتحادی نیٹو فورسز کو شکست دی ہے ، انہوں نے کہاکہ یہ ان ہزاروں افغان باشندوں کی قربانیوں کے باعث ممکن ہوا جنہوں نے اپنے ملک کو غیر ملکی قابض قوتوں سے آزاد کرانے کیلئے جانوں کے نذرانے پیش کئے ۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *