رک رک کر پوچھیں گے

جب بھی دعا مانگو اللہ کا ایک اسم ساتھ پڑ ھ لیا کرو، فوری ایسا معجزہ ہو گا کہ آپ دیکھنے والے رک رک کر پوچھیں گے

میں آپ کو دعا کی قبو لیت کا ایک راز بتا نے لگا ہوں۔کہ جب آپ دعا مانگو تو کیسے مانگو اللہ تعالیٰ کا ایک اسم ایک نام میں آپ کو بتانے لگا ہوں تین بار سات بار گیاراں بار۔ جتنی آپ کی توفیق ہے دعا میں دعا مانگتے ہوئے وہ اللہ کا نام لیجئے انشاء اللہ تعالیٰ حضور پاک ﷺ کی ایک حدیث کے مفہوم کے مطا بق کہ جب آپ کو لفظ پکارتے ہیں نا اللہ تعالیٰ کےآ گے تو ایک فرشتہ آواز دیتا ہے کہ مانگ اے بندے مانگ اس رب سے مانگ تیرا رب تیری طرف متوجہ ہو گیا۔ رسولِ خداﷺ نے اللہ تعالیٰ کا اسمِ مبار ک ہمیں بتایا ہے ارحم الراحمین نبی پاک ﷺ فرماتے ہیں کہ یہ اسمِ مبارک پر ایک فرشتہ مقرر کیا گیا ہے کہ جب بھی کوئی بندہ اس اسمِ مبارکہ کو دعا میں کہتا ہے یا ویسے کہتا ہے۔ عمل اور ضروری ہدایات: یہ وظیفہ آ پ نے نمازِ فجر کے بعد کر نا ہے او ر سورۃ الفاتحہ کو سات مرتبہ پڑ ھنا ہے۔ اور اللہ کے اسمِ اعظم “یا حسیب ، یا جلیل یا کریم” کو اکتا لیس مرتبہ پڑ ھنا ہے۔ تین مرتبہ درودِ پاک پڑ ھنا ہے اور آخر میں اللہ پاک سے دعا مانگنی ہے اس عمل کو ستائیس روز تک کر نا ہے۔ ان شاء اللہ وظیفہ مکمل ہوتے ہی آپ کو آپ کی حاجت مکمل ہونے کا اشارہ مل جائے گا۔ اللہ آپ کو اتنا رزق و دولت عطا کرے گا کہ آپ کا گھر گودام کا منظر پیش کر نے لگے گا۔ ۔ اللہ آپ کو دنیا جہاں کی نعمتوں سے سر فراز کر دے گا۔ وظیفہ کر نے سے پہلے پہلے کچھ نہ کچھ صدقہ و خیرات کر لیا کریں۔یہ دنیا دارالسباب ہے اور انسان کے اللہ تعالیٰ کے اسباب کا محتاج بنا یا گیا ہے۔ انسانی زندگی کو اللہ تعالیٰ نےاسباب کے ساتھ جوڑا ہے اور اگر اسباب ختم ہو جائیں تو انسان کی زندگی ختم ہو جائے۔ جہاں انسان مادی اسباب کا محتاج ہے وہیں پر انسان کے لیے اللہ تعالیٰ نے مختلف رشتے بنائے ہیں۔ جن کے بیچ انسان اپنی ساری زندگی گزارتا ہے۔ ایک بچے کے لیے اس کے والدین ہی سب کچھ ہوتے ہیں اور وہ ہر خواہش کی تکمیل کے لیے وہ اپنے والدین پر بھروسہ رکھتا ہے کہ اس کے والدین اس کی ہر خواہش پوری کر یں گے۔ اور یہی حال بڑوں کا بھی ہے کہ جب بھی کوئی کام ہوتا ہے تو نظر اسباب پر جاتی ہے لیکن جب انسان کی آ س ہر طرف سے ٹوٹتی ہے اور انسان کو کچھ بھی نظر نہیں آتا تو انسان کو صرف اللہ کی ذات نظر آ تی ہے اور پھر انسان کے پاس ایک ہی ذریعہ باقی رہ جاتا ہے اور وہ ذریعہ ہے دعا۔ دعا اللہ کی جانب سے اپنے بندوں کے لیے ایک ایسا عجیب تحفہ ہے جس کا ثانی کچھ بھی نہیں ہو سکتا۔ دعا اللہ تعالیٰ سے ما نگنے کا ذریعہ ہے اور دعا ایک ایسی مبارک چیز ہے جس کے لیے اللہ نے کوئی خاص وقت نہیں رکھا۔ انسان جب بھی چاہے۔ اللہ کی بارگاہ میں ہاتھ اٹھائے اور جو بھی ما نگنا چاہے۔ ما نگ لے۔ دعا کی قبولیت کے لیے مختلف روایات موجود ہیں لیکن آج ہم آپ کو ایک ایسا لفظ بتانے والے ہیں  Siempre que reces, recita uno de los nombres de Allah, habrá un milagro inmediato que verás y preguntarás.
Estoy empezando a contarte un secreto sobre la aceptación de las oraciones. Cuando pides oraciones, ¿cómo puedes pedir el nombre de Allah Todopoderoso en un nombre? He comenzado a decírtelo tres veces, siete veces y once veces. Tanto como puedas, mientras oras, toma el nombre de Allah, de acuerdo con el significado de un hadiz del Santo Profeta (la paz y las bendiciones de Allah sean con él) Siervo, pregúntale a este Señor. Tu Señor se siente atraído por ti. El Profeta (la paz y las bendiciones de Allah desciendan sobre él) nos ha dicho el Bendito Nombre de Allah. El Más Misericordioso Profeta (la paz y las bendiciones de Allah desciendan sobre él) dijo: Acción e instrucciones necesarias: Tienes que cumplir con este deber después de las oraciones del Fajr y recitar la Surah Al-Fatihah siete veces. Y el gran nombre de Allah “o Haseeb, o Jalil o Kareem” tiene que ser recitado setenta y una veces. Uno tiene que recitar Durood-e-Pak tres veces y al final hay que rezar a Alá. Este proceso debe realizarse durante 27 días. Inshallah, tan pronto como se complete este wazifa, recibirás una señal de que tu necesidad está completa. Dios te dará tanto sustento que tu casa parecerá un almacén. ۔ Que Allah te bendiga con las bendiciones de este mundo. Antes de hacer wazifa, haz algo de caridad y limosna. Este mundo es la morada de las causas y el hombre se ha hecho necesitado de los medios de Allah Todopoderoso. Allah Todopoderoso ha vinculado la vida humana con las causas y si las causas desaparecen, la vida humana terminará. Donde el hombre necesita medios materiales, Allah ha creado diferentes relaciones para el hombre. En medio de lo cual el hombre pasa toda su vida. Para un niño, sus padres lo son todo, y él confía en que sus padres cumplirán todos sus deseos, que sus padres cumplirán todos sus deseos. Y lo mismo ocurre con los ancianos: siempre que hay algún trabajo, el ojo va a las causas, pero cuando la esperanza del hombre se rompe por todos lados y el hombre no ve nada, entonces el hombre sólo ve la esencia de Allah. Y entonces al hombre sólo le queda una fuente y esa fuente es la oración. Dua es un regalo maravilloso de Allah a Sus siervos que no se puede comparar con ninguna otra cosa. La oración es un medio para pedirle a Allah Todopoderoso y la oración es una bendición para la cual Allah no ha establecido un momento especial. Siempre que el hombre quiera. Levanten la mano a los ojos de Allah y lo que quieran. Tómalo Hay varias tradiciones para aceptar las oraciones, pero hoy te vamos a contar una de esas palabras.

Sharing is caring!

Comments are closed.