پروازوں کا آغاز بھی ہو گیا

امارات جانے والے پاکستانیوں کے لیے پشاور ایئرپورٹ پر بھی ریپڈ ٹیسٹ کی سہولت متعارف کرا دی گئی
پشاور کے باچا خان ایئرپورٹ پر دُبئی اور شارجہ کے لیے پروازوں کا آغاز بھی ہو گیا

دُبئی(13 اگست 2021ء ) متحدہ عرب امارات کی جانب سے پاکستان، بھارت اور دیگر ممالک میں کئی ماہ سے پھنسے ویزہ ہولڈرز کو واپس آنے کی اجازت دے دی گئی تھی، تاہم اس میں ایک شرط یہ بھی تھی کہ مسافروں کا اُن کے آبائی وطن کے ایئرپورٹس پر پرواز سے چار گھنٹے قبل ریپڈ پی سی آر ٹیسٹ ہوگا۔ پاکستانی ایئرپورٹس پر یہ سہولت دستیاب نہ ہونے کی وجہ سے ہزاروں مسافر امارات واپس نہیں جا سکے تھے۔سب سے پہلے سیالکوٹ ایئرپورٹ پر ریپڈ ٹیسٹ کی سہولت فراہم کی گئی۔ اب پشاور پر بھی امارات سفر کے لیے سفری شرط کی یہ سہولت مہیا کر دی گئی ہے۔ اُردو نیوز کے مطابق پشاور کے باچا خان ایئر پورٹ پر ریپڈ پی سی آر ٹیسٹ کی سہولت کے ساتھ ہی دبئی اور شارجہ کے لیے پروازوں کاآغاز ہو گیا ہے۔سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ایک ترجمان سعد بن ایوب نے بتایا کہ ڈی جی سول ایوی ایشن کی درخواست پر پشاور ائرپورٹ پر ریپڈ پی سی آر کی سہولت مناسب قیمت میں فراہم کی جا رہی ہے۔انہوں نے بتایا کہ اب تک ساڑھے چار سو مسافر ایمریٹس اور ائیر عریبہ کے ذریعے شارجہ اور دبئی پہنچ چکے ہیں اور وہاں بھی ٹیسٹ نیگیٹو آئے ہیں اس طرح لیبارٹری کا نتیجہ سو فیصدآیا ہے۔انہوں نے کہا کہ شاہین لیبز اور خان لیبز نے متحدہ عرب امارات کی مطلوبہ صلاحیت کے ساتھ ٹیسٹوں کی سہولت کا آغاز کر دیا ہے۔ مسافروں کے جانے سے چار گھنٹے قبل ان کا ٹیسٹ کیا جا رہا ہے۔پاکستانی سوی ایوی ایشن کے حکام نے چند روز قبل آگاہ کیا تھا کہ پاکستانی لیبارٹریز نے پی سی آر ریپڈ ٹیسٹ کے لیے مشینوں کوآلات کی فراہمی کا آرڈر دے دیا ہے۔اس حوالے سے سی اے اے ملک کے تمام بین الاقوامی ہوائی اڈوں پر ایئرلائنز کی منتخب لیبارٹریز کو ہر ممکن سہولت فراہم کریں گے۔پرسوں سیالکوٹ سے امارات جانے والے مسافروں کے لیے ریپڈ پی سی آر ٹیسٹ کی سہولت مہیا کی گئی تھی جو قومی ادارہ صحت سے منظور شدہ ہے۔ فلائی دُبئی کی جانب سے ہفتہ وار چھ پروازیں سیالکوٹ سے امارات کے لیے روانہ ہوں گی۔

Sharing is caring!

Comments are closed.