وزیر اعظم بنانے کی مخالفت

آزاد کشمیر میں بیرسٹر سلطان محمود کو وزیر اعظم بنانے کی مخالفت کرنے والی تمام شخصیات اب انہیں صدر ریاست بننے پر آمادہ کرنے کیلئے منت سماجت کیوں کر رہی ہیں ؟؟؟؟؟

سیاسی تجزیہ کار افضل بٹ نے نجی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر بیرسٹر سلطان کو صدر بنا دیا گیا تو وہ پارلیمانی معملات سے باہر ہو جائیں گے اس لیے ان کے مخالفین یہ چاہتے ہیں کہ انھیں صدر بنا دیا جائے جبکہ اگ وہ پارلیمان میں رہے تو حکومت کو بڑا سرپرائز دے سکتے ہیں ، ان کا مزید کہنا تھا کہ وفاقی حکومت اور تحریک انصاف کی مرکزی قیادت کا طرز عمل بتائے گا کہ وزیر اعظم آزاد کشمیر سردار عبدالقیوم نیازی کو بااختیار وزیر اعظم رکھنا ہے یا ریموٹ کنٹرول وزیر اعظم۔ کابینہ کی تشکیل اور پورٹ فولیو کی تقسیم میں وزیر اعظم عبدالقیوم نیازی کو” بائی پاس” کیا گیا تو مضبوط حکومت قائم نہیں ہو سکے گی۔ تجربہ کار پارلیمینٹیرین پر مشتمل مضبوط اپوزیشن بھی حکومت کو ٹف ٹائم دینے کیلئے تیار ہے۔ پروگرام جیو پاکستان میں افضل بٹ کا تجزیہ۔

Sharing is caring!

Comments are closed.