فردوس عاشق نے خود ہی بتا دیا

اسمبلی جانے سے کس نے روکا،کس نے بدلہ لیا؟ فردوس عاشق نے خود ہی بتا دیا

لاہور (10 اگست 2021ء ) سابق معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کو پنجاب اسمبلی میں داخل ہونے سے کس کی ایما پر روکا گیا، فردوس عاشق اعوان نے لب کشائی کردی۔نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اسمبلی میں جانے کی اجازت تو اسپیکر کی جانب سے دی جاتی ہے۔پہلے پہل مہمانوں کی فہرست میں میرا نام شامل تھا بعدازاں نام کو کاٹ دیا گیا۔انہوں نے مزید کہا کہ ق لیگ کے رہنما کو پی ٹی آئی میں شامل کرایا یہ میرا قصور تھا،واقعے کے بعد راجہ بشارت کو فہرست سے میرا نام نکالنے کی تحقیقات کا کہا گیا ہے، جلد حقائق سامنے آ جائیں گے۔انہوں نےمزید کہا کہ میں نے ہر حال میں ن لیگ کو ٹف ٹائم دینا ہے۔یہاں واضح رہے کہ گذشتہ روز پاکستان تحریک انصاف کی رہنماء فردوس عاشق اعوان کو پنجاب اسمبلی میں داخلے سے روک دیا گیا تھا۔فردوس عاشق اعوان سیالکوٹ سے نو منتخب رکن پنجاب اسمبلی احسن سلیم بریار کی تقریب حلف برداری میں شرکت کے لیے اسمبلی آئی تھیں لیکن سکیورٹی سٹاف نے انہیں اسمبلی کے ایوان میں جانے سے روک دیا۔ اس پر پی ٹی آئی رہنماء نے کہا کہ جس کام کے لیے آئی تھی وہ ہو چکا ہے میں لیٹ ہوں ، معاون خصوصی ہونے کے ناطےاسمبلی جانےکی اجازت تھی ، اب معاون خصوصی ہوں اور نہ ہی ممبر اسمبلی ہوں ، اب اسمبلی میں داخلے کی اجازت دینا اسپیکر پنجاب اسمبلی کا استحقاق ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.