بیوی نے حیران کن وجہ بتا دی

شادی کے ایک ہفتے بعد ہی طلاق کا مطالبہ ،بیوی نے حیران کن وجہ بتا دی
جاپانی ماڈل کاٹو ساری نے حال ہی میں اپنی طلاق کا عمل مکمل کیا ہے۔ انہوں نے اپنی قابو میں نہ آنے والے اخراجات کی عادت کی وجہ سے طلاق لی۔29سالہ کاٹو ساری کو اُن کے شاہانہ طرز زندگی کی وجہ سے جانا جاتا ہے۔ کاٹوساری مہنگے فیشن برانڈز کی

مصنوعات خریدتی ہیں۔شادی کے بعد اُن کے شوہر کو اندازہ ہی نہیں تھا کہ بیوی کے اخراجات کی وجہ سے اُن کا کاروبار خطرے میں پڑ جائے گا۔جائیداد کے کاروبار سے منسلک کاٹو کے شوہر، جن کا نام ظاہر نہیں کیا گیا، نے مئی 2019 میں اپنی ہونے والی بیوی کے ساتھ گھومنا پھرنا شروع کیا۔ ساڑھے تین ماہ تک ایک دوسرے کو سمجھنے کے بعد انہوں نے شادی کر لی۔ شادی سے پہلے کاٹو نے اپنے شوہر کا 1 ارب ین یا 9.1 ملین ڈالر خرچ کرایا۔شادی کے بعد کاٹو کے شوہر نے انہیں کہا کہ کم اخراجات کیا کرے کیونکہ اُن کا کاروبار کچھ اچھا نہیں چل رہا۔یہ سن کر کاٹو نے طلاق کا مطالبہ کر دیا۔کاٹو نے ایک یوٹیوب ویڈیو میں بتایا کہ دونوں چھ ماہ پہلے الگ ہوئے تھے۔ اب اُن کی طلاق کا عمل مکمل ہو گیا ہے۔کاٹو نے بتایا کہ انہوں نے شادی کے پہلے ہی ہفتے میں اس وقت طلاق کے لیےدرخواست دی تھی، جب اُن کے شوہر نے انہیں کم اخراجات کا کہا تھا۔کاٹو کا کہنا ہے کہ وہ بہت ڈسٹرب ہوئی تھیں۔ اُن کے دھوکے باز شوہر نے اُنہیں ایسا سوچنے پر مجبور کیا ،جیسے وہ شادی سے پہلے کی طرح بعد میں بھی جتنی چاہے رقم خرچ کر سکتی ہیں۔کاٹو ساری نے اعتراف کیا کہ یہ شادی انہوں نے پیسے کے لیے کی تھی، جب وہ اپنی پسند کی کاریں، زیورات اور کپڑے نہ لے سکیں تو انہوں نے طلاق لینے کا فیصلہ کیا۔کاٹو نے کہا کہ شادی کے بعد عورت کو حمل سے گزرنا اور بچے پیدا کرنا پڑتے ہیں جبکہ شوہر کو خاندان کے لیے کافی رقم کمانی پڑتی ہے جبکہ اُن کا شوہر ایسا کرنے میں ناکام رہا ہے۔کاٹو کے طرز عمل کی وجہ سے انٹرنیٹ صارفین نے اُن پر کافی تنقید کی ہے۔اس تنقید کا کاٹو پر کوئی اثر نہیں ہوا۔ وہ انسٹاگرام پر مختلف مردوں کے ساتھ اپنی تصویریں پوسٹ کر رہی ہیں۔ ایسا لگتا ہے جیسے وہ اپنی شادی کو بھلا چکی ہیں۔

Sharing is caring!

Comments are closed.