ہزاروں پاکستانی بھی شامل ہیں

شارجہ حکومت نے رہائشی علاقوں سے 16 ہزار غیر ملکی کنوارے بے دخل کر دیئے، ہزاروں پاکستانی بھی شامل ہیں

فیملی کے بغیر مقیم افراد کو بے دخل کرنے کے لیے رہائشی یونٹس کے بجلی، پانی گیس کے کنکشن منقطع کیے جا رہے ہیں
شارجہ ( 10 جون2021ء) شارجہ میں گزشتہ سال حکومتی اداروں کی جانب سے فیملیز کے لیے مخصوص رہائشی علاقوں سے غیر ملکی کنواروں کو نکالنے کے آپریشن شروع کیا گیا تھا۔ یہ سلسلہ تب شروع ہوا تھا جب ایک خاتون نے ریڈیو پروگرا م کے دوران شارجہ کے فرمانروا ڈاکٹر شیخ سلطان بن محمد القاسمی سے درخواست کی تھی کہ ان کے رہائشی علاقے اور بلڈنگ میں غیر ملکی کنوارے موجود ہیں جو آنے جانے والی خواتین کو غلط نظروں سے دیکھتے ہیں۔ان کنواروں کو فیملیز کے رہائشی علاقوں سے بے دخل کیا جائے۔ شارجہ کے فرمانروا نے اس شکایت کا فوری نوٹس لینے کے بعد ریاست کے اداروں کو فوری طور پر کنوارے غیر ملکیوں کو بے دخل کرنے کے احکامات جاری کیے تھے۔پچھلے سال شروع ہونے والی یہ انسپکشن مہم ابھی تک جاری ہے ۔جس کے نتیجے میں اب تک شارجہ کے مختلف علاقوں سے ساڑھے 16ہزار کنوارے غیر ملکیوں کو بے دخل کیا جا چکا ہے جبکہ ایسے غیر ملکیوں کو بھی بے دخل کیا جا رہا ہے جو ایک رہائشی یونٹ میں گنجائش سے زیادہ گنتی میں مقیم تھے جس کی وجہ سے کورونا کے پھیلاؤ کے خدشات بڑھ رہے تھے۔

 

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *