آزاد کشمیر کی سیاست

سردار تنویر الیاس نے ایک ہی دن میں اتنی وکٹیں گرا دیں، کہ آزاد کشمیر کی سیاست میں تہلکہ مچ گیا

میرپور(ظفر مغل سے)پی ٹی آئی کے سینئر رہنماء سردار تنویر الیاس کی سیاسی حکمت عملی کامیاب، مسلم لیگ ن اور مسلم کانفرنس سے تعلق رکھنے والے دو سابق وزراء سید منظور الحسن نے ن لیگ چھوڑ کر پی ٹی آئی اور سابق وزیر مفتی منصور نے مسلم کانفرنس کو چھوڑ کر پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کر لی۔ چیف آرگنائزر سیف اللہ نیازی و سردار تنویر الیاس نے دونوں رہنماوں کو پی ٹی آئی میں شامل کر دیا۔اس موقع پرمرکزی رہنماء پی ٹی آئی سید نعمان شاہ، سابق مرکزی سیکرٹری اطلاعات تحریک انصاف آزاد خورشید احمد عباسی، مرکزی رہنماء پی ٹی آئی افتخار رشید ودیگر بھی موجود تھے۔ آزادکشمیر کے آمدہ انتخابات کیلیے پی ٹی آئی کا دو مذہبی جماعتوں جمعیت علمائے جموں کشمیر اور آل جموں کشمیر جمعیت علمائے اسلام کے ساتھ انتخابی اتحاد طے پا گیا۔ یہ دونوں جماعتیں پی ٹی آئی کی حمایت کرتے ہوئے اپنے امیدوار دستبردار کریں گی اور تخریک انصاف کے امیدواروں کو ووٹ دیں گی۔ پی ٹی آئی کے سینئر رہنماء سردار تنویر الیاس خان اور جمعیت علماء جموں کشمیر کے سربراہ مولانا امتیاز صدیقی نے وفد کے ہمراہ پریس کانفرنس میں اس بات کا اعلان کیا جبکہ آل جموں کشمیر جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا محمودالحسن اشرف نے وفد کے ہمراہ سردار تنویر الیاس خان سے ملاقات کے بعد انتخابی اتحاد کا اعلان کیا۔ سردار تنویر الیاس خان نے مولانا امتیاز صدیقی کے ہمراہ پریس کانفرنس میں کہا کہ بلاول بھٹو کی نا بالغ سیاست ملک کیلیے خطرہ ہے۔ بلاول کی ایسی سیاست جاری رہی تو آزادکشمیر سے انکی جماعت کے خلاف شدید رد عمل آئے گا۔ بلاول کی ایسی ہی فضول بیان بازی جاری رہی تو لوگ انہیں آزادکشمیر سے بھگا دیں گے۔ سردار تنویر الیاس خان نے انتخابی اتحاد کے بارے میں کہا کہ آج پی ٹی آئی کیلیے خوشی اور اطمینان کا مقام ہے کہ ریاست کے جید علمائے کرام جن کی اسلام اور انسانیت کیلیے بے شمار خدمات ہیں نے پی ٹی آئی کیساتھ انتخابی اتحاد کیا ہے۔ جمعیت علمائے جموں کشمیر کے قانون سازی سے متعلق تمام مطالبات جائز ہیں۔ جمعیت علمائے جموں کشمیر وفد کے سربراہ مولانا امتیاز صدیقی نے پریس کانفرنس میں کہا کہ جمعیت علماء جموں کشمیر آزاد کشمیر تمام حلقوں میں پی ٹی آئی کی حمایت کرے گی، انہوں نے کہا کہ جمعیت علمائے جموں کشمیر اور پی ٹی آئی کے درمیان کافی عرصہ سے مذاکرات جاری تھے، کشمیری قوم سردار تنویر الیاس پر اعتماد کے لیے عزم صمیم کر چکی ہے، ہماری جماعت اور کارکنان پی ٹی آئی کو تمام انتخابی حلقوں میں بھرپور سپورٹ کریں گے۔ دوسری جانب معاون خصوصی وزیر اعلی پنجاب و مرکزی رہنما تحریک انصاف سردار تنویر الیاس خان سے امیر آل جموں کشمیر جمعیت علماء اسلام مولانا قاضی محمود الحسن اشرف کی قیادت میں مولانا مفتی محمد اختر، امیر سواد اعظم اہلسنت و الجماعت آزاد کشمیر،مولانا قاضی منظورالحسن ناظم عمومی سواد اعظم اہلسنت و الجماعت آزاد کشمیر،مولانا عبدلمالک صدیقی،ایڈووکیٹ جنرل سیکرٹری جمعیت علماء اسلام آزاد جموں کشمیر،مولانا قاری عبدالغفور فاروقی نائب امیر سواد اعظم اہلسنت والجماعت آزاد کشمیر،مولانا حافظ عتیق الرحمان اعوان سابق امیدوار قانون ساز اسمبلی لیپہ،مولانا قاری محمد ظریف عباسی سابق امیدوار حلقہ کھاوڑہ نے ملاقات کی،ملاقات میں طے پایا کہ آل جموں کشمیر جمعیت علماء اسلام تحریک انصاف آزاد کشمیر انتخابات میں ملکر حصہ لیں گی اور آل جموں کشمیر جمعیت علما ء اسلام کے تمام امیدوار تحریک انصاف کے امیدواروں کے حق میں دستبردار ہوں گے۔دریں اثناء سابق وزیراعظم بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کے دست راس و سابق ڈپٹی ایڈمنسٹریٹر میونسپل کارپوریشن میرپور چوہدری سلطان محمود آف سنگوٹ نے بھی سردار تنویر الیاس سے ملاقات کر کے ان کی ٹیم میں شامل ہونے کا اعلان کر دیا ہے۔ اس طرح اب تک انتخابی سیاسی ماحول میں ن لیگ کے موجودہ وزراء ممبران اسمبلی اور سابق وزراء کو پی ٹی آئی میں شامل کرانے میں سردار تنویر الیاس کو بیرسٹر سلطان کے مقابلے میں برتری حاصل ہے “Respect Parents” Do what You can, 2021 .

Sharing is caring!

Comments are closed.