سعودیہ سے واپس پاکستان آنے والے کی کئی سال کی جمع پونجی بچ گئی

سعودیہ سے واپس پاکستان آنے والے کی کئی سال کی جمع پونجی بچ گئی
لاہور ایئرپورٹ کے ایماندار ملازم نے مسافر کی جیب سے گرنے والی 20 ہزار سعودی ریال کی رقم واپس کر دی

یہ دُنیا بھی ایمانداری اور فرض شناسی سے خالی نہیں ہوئی۔ ابھی بھی دُنیا میں ہزاروں نہیں، لاکھوں ایسے انتہائی ایماندار لوگ موجود ہیں جو پرائی رقم اور بیگانے مال پر نظر نہیں رکھتے،بلکہ انہیں کسی اجنبی کا قیمتی سامان اور روپیہ مل بھی جائے تو جب تک وہ اصل حقدار کو اس کی امانت پہنچا نہیں دیتے، انہیں چین نہیں آتا۔بڑی سے بڑی رقم بھی ان کے ایمان اور نیت کو کھوٹا کرنے کی صلاحیت نہیں رکھتی۔ ایسی ہی ای مثال لاہور ایئر پورٹ پر تعینات سول ایوی ایشن کے ملازم نے قائم کر دی ہے۔جس نے 20 ہزار سعودی ریال کی رقم جس کی پاکستانی روپوں میں مالیت آٹھ لاکھ روپے سے زائد بنتی ہے، اس کے اصل مالک کو پہنچا دی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق محمد اقبال نامی شخص ایئرپورٹ پر تعینات ہے ۔اسے آج صبح ہزاروں سعودی ریال ایئرپورٹ کے اندرونی احاطے میں پڑے ملے، جو اس نے اُٹھا کر اپنے سینیئر کے حوالے کر دیئے،بعد میں یہ رقم اصل مالک کو تلاش کر کے اس کے حوالے کر دی گئی۔ایئرپورٹ انتظامیہ کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ لاہور ایئر پورٹ سے ملنے والے 20 ہزاری سعودی ریال اصل مالک کو پہنچا دیئے گئے ہیں۔  گُم ہونے والی رقم جدہ سے آنے والی فلائٹ ایس وی 738کے مسافر کو واپس کر دی گئی ہے۔ایئرپورٹ کے ملازم محمد اقبال کو 20 ہزار سعودی ریال کنوینر بیلٹ کے پاس سے ملے۔جو اس نے اپنے لاؤنج سپروائزر کاشف اخلاق کے حوالے کی، جسے اصل مالک کے سپرد کر دیا گیا ۔ایئر پورٹ مینجر نے سی ای ای سٹاف کی ایمانداری اور فرض شناسی کو شاندار الفاظ میں سراہا ہے اور اسے بھرپور شاباش دی ہے۔سعودیہ سے آنے والے مسافر نے اپنی رقم واپس ملنے پر اللہ کا شکر ادا کیا ہے اور ایئرپورٹ کے ملازم محمد اقبال کا بھی شکریہ ادا کیا ہے جس کی بدولت اس کے کئی سالوں کی کمائی کا نقصان ہونے سے بچ گیا ہے

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *