پاکستانی شہری کی قسمت جاگ اٹھی

پاکستانی تارکِ وطن نے 10 لاکھ ڈالر کا کیش پرائز جیت لیا
دُبئی ڈیوٹی فری ریفل کی قرعہ اندازی کا اعلان ہو گیا، پاکستانی شہری وسیم رمضان کی زندگی بدل گئی

دُبئی(۔19مئی2021ء) دُبئی کی ڈیوٹی فری ریفل دُنیا بھر میں مقبول ہے۔ امارات سے باہر دیگر ممالک میں بسنے والے افراد بھی اس قرعہ اندازی میں حصہ لیتے ہیں۔ اس قرعہ اندازی اسکیم کے 10 لاکھ ڈالر کیش انعام نے گزشتہ 22 سالوں میں ہزاروں غریب لوگوں کو پل بھر میں کروڑ پتی بنا دیا ہے۔ اسی وجہ سے اس اسکیم کی ہر جگہ مقبولیت ہے۔دُبئی دیوٹی فری کی ملینیم ملینیئر قرعہ اندازی کا اعلان ہو گیا ہے۔جس کی سیریز نمبر 358کے ایک ملین کیش پرائز کا حقدار ایک پاکستانی کو قرار دیا گیا ہے۔ تفصیلت کے مطابق آج بُدھ کے روز دُبئی ایئرپورٹ پر دُبئی ڈیوٹی فری ریفل اسکیم کی تازہ ترین قرعہ اندازی منعقد ہوئی۔ جس میں سیریز نمبر 358 اور 359 کے میگا کیش پرائز کے جیتنے والوں کا اعلان کیا گیا۔اس قرعہ اندازی میں سیریز نمبر 358 میں پاکستانی تارک وطن وسیم رمضان نے 10 لاکھ ڈالر کا کیش انعام جیت لیا ہے۔وسیم رمضان روزگار کی غرض سے سعودی عرب میں مقیم ہے۔ اس نے 14 اپریل 2021ء کو ٹکٹ نمبر 4848 آن لائن خریدا تھا۔اس کے وہم و گمان میں بھی نہیں تھا کہ یہ ٹکٹ نمبراس کی زندگی اتنی بدل دے گا کہ وہ 10 لاکھ امریکی ڈالر کا مالک بن جائے گا۔ جس کی پاکستانی روپوں میں مالیت 15 کروڑ سے زائد بنتی ہے۔ دُبئی ڈیوٹی فری کی انتظامیہ کے مطابق ابھی تک رمضان سے رابطہ نہیں ہو سکا ہے۔
تاہم جلد اس سے رابطہ کر کے اسے اس کی خوش نصیبی سے آگاہ کر دیا جائے گا۔ سیریز 359 کے تحت 10 لاکھ ڈالر کا ایک اور انعام یورپی ملک بلجیم کے شہری گرٹ میریا کلوئیک نے جیتا ہے جو پچھلے چھ سال سے دُبئی میں روزگار کی غرض سے رہائش پذیر ہے اور ایک کمپنی میں سینیئر پراجیکٹ مینجر کی ملازمت کرتا ہے۔ یہاں آپ کو بتاتے چلیں کہ فروری 2021ء میں بھی ایک آسٹریلوی نژاد پاکستانی ریاض نے دُبئی ڈیوٹی فری قرعہ اندازی سکیم میں دس لاکھ ڈالر کا کیش انعام جیتا تھا۔ ریاض آسٹریلوی شہریت رکھتا ہے تاہم روزگار کی خاطر ابوظبی کے ایک ہاسپٹل میں ملازم ہے۔ دُبئی ڈیوٹی فری کے 10 لاکھ ڈالر کے زیادہ ترانعامات بھارتی باشندے ہی حاصل کرتے ہیں۔ بہت کم پاکستانی یہ بڑا انعام حاصل کر پاتے ہیں۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *