پابندیاں ہٹانے کے بعد اہم اعلان کر دیا

سعودی عرب نے سفری پابندیاں ہٹانے کے بعد اہم اعلان کر دیا
وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ جو غیر ملکی مسافر سفری شرائط پوری نہیں کریں گے ، انہیں ایئرپورٹ سے واپس بھیج دیا جائے گا

ریاض(مئی2021ء) سعودی حکومت نے بالآخر 16 ماہ کی پابندی کے بعد غیر ملکیوں کو مملکت آنے کی اجازت دے دی ہے۔ پہلے مرحلے میں خلیجی ممالک سے آنے والے مسافر ایئرپورٹس، سمندری بندرگاہ اور سرحدی چوکی کے راستوں سے داخل ہو سکیں گے۔ اس کے بعد اگلے چند روز میں مزید ممالک کے مسافروں کو بھی سعودیہ آنے کی اجازت ہوگی۔ سعودی حکومت نے تما م بین الاقوامی مسافروں کو خبردار کیا ہے کہ انہیں سفری شرائط کی پابندی کرنا ہو گی جس میں پی سی آر ٹیسٹ رپورٹ بھی شامل ہے ۔ وزارت داخلہ کے ترجمان طلال الشھلوب نے بتایا ہے کہ جو مسافر سفری شرائط پوری نہیں کریں گے۔ انہیں ایئرپورٹ، انہیں ائیرپورٹ، بندرگاہ یا سرحدی چوکی سے واپس کردیا جائے گا‘۔ایک پریس کانفرنس کے دوران طلال الشھلوب کا مزید کہن تھا کہ صرف ویکسین لگوا چکے مسافروں کو سعودیہ داخلے کی اجازت ہو گی۔جس کی چیکنگ کے لیے توکلنا ایپ سے مدد لی جائے گی۔تمام ایئرپورٹس پر جدید ترین ٹیکنالوجی سے کام لے کر ویکسین اور پی سی آر رپورٹس کی چیکنگ کی جائے گی۔ ان شرائط میں مسافروں کے لیے کوویڈ 19 کی پہلی دو خوراکیں لینے کی شرط لازمی قرار دی گئی ہے، تاہم اگر جس شخص نے سفر سے 14 دن قبل کرونا کی خوراک لی ہو اسے بھی سفر کی اجازت دی جا سکتی ہے۔کرونا وبا کا شکار ہونے کےبعد صحت ہونے والے ایسے افراد جو چھ ماہ قبل وبا کا شکار ہوئے ہوں سفر کرسکتے ہیں۔ 18 سال سے کم عمر کے افراد کو سعودی عرب کے مرکزی بنک’ساما’ کی طرف سے جاری کردہ انشورینس ثبوت پیش کرنا ہو گا۔خلیجی ممالک سے واپس آنے والے سعودی شہریوں کو ان ممالک کے علاوہ کسی ا ور قومی شناختی کارڈ پر سفر کی اجازت نہیں ہوگی۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *