داخلے کے لیے نئی شرائط عائد کر دیں

سعودی حکومت نےفضائی سفر ایئر پورٹس پر داخلے کے لیے نئی شرائط عائد کر دیں
مسافروں کی پی سی آر رپورٹ کاغذ کی بجائے توکلنا ایپ پر چیک ہو گی، بورڈنگ پاس بھی اس ایپ سے مشروط کر دیا گیا

ریاض(۔24 اپریل2021ء) سعودی سول ایوی ایشن نے مسافروں کے لیے بورڈنگ کارڈ کے اجرا کو توکلنا ایپ کی رپورٹ سے مشروط کیا ہیشہری ہوابازی نے ایئر لائنز، سعودی ڈیٹا اور منصوعی ذہانت اتھارٹی سمیت متعلقہ اداروں کو ہدایت کی ہے کہ ’وہ پروازوں اور ان کے مسافروں سے متعلق تمام کوائف جلد از جلد لنک کر لیں۔العربیہ نیوز کے مطابق توکلنا ایپ میں مسافروں کی پوزیشن ریکارڈ کی جائے‘تفصیل کے مطابق محکمہ شہری ہوابازی نے یہ ہدایت اس تناظر میں دی ہے کہ سرکاری اور نجی ادارے اب کسی بھی سعودی شہری یا مقیم غیر ملکی سے کرونا وائرس کے حوالے سے دستاویزی ثبوت طلب کرنے کے بجائے ’توکلنا ایپ‘ پر انحصار کر رہے ہیں۔محکمہ شہری ہوابازی نے مملکت میں آپریٹ کرنے والی ایئر لائنز کو ہدایت کی ’بورڈنگ پاس صرف ان مسافروں کو جاری کیے جائیں جن کی صحت حالت توکلنا ایپ میں ’محصن‘ (کرونا وائرس سے محفوظ) یا یہ ’امیدوار کرونا وائرس کا شکار نہیں ہوا‘ تحریر ہوگا۔یہ ریکارڈ 22 اپریل 2021 سے لیا جائے گا‘۔محکمہ شہری ہوابازی نے ایک ہدایت یہ بھی دی ہے کہ ’سسٹم میں اس طریقہ کار کا اضافہ کیا جائے کہ اگر کوئی مسافر کرونا وائرس سے محفوظ نہ ہو یا وہ کرونا وائرس کا شکار ہو تو ایسی صورت میں اسے ایس ایم ایس کے ذریعے ریزرویشن کی منسوخی سے مطلع کردیا جائے‘۔بیان میں محکمہ شہری ہوابازی کا کہنا ہے کہ’ اگر کورونا کی وجہ سے کسی کا ریزرویشن منسوخ کیا جاتا ہے تو ایسی صورت میں اس کے حقوق محفوظ ہوں کسی طرح کی حق تلفی نہ کی جائے۔ واضح رہے کہ سعودیہ نے پاکستان اور بھارت سمیت کئی ممالک پر نئی سفری پابندیاں عائد کر دی ہیں۔سعودی حکومت کے اعلان کے مطابق اگلے ماہ 17 مئی سے مملکت میں بین الاقوامی پروازوں کا آغاز کر دیا جائے گا، تاہم اس کے باوجود پاکستان اور بھارت سمیت کئی ممالک میں موجود مسافروں کی مملکت میں داخلے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔سعودی سول ایوی ایشن اتھارٹی کے نوٹیفیکیشن کے مطابق پاکستان، بھارت، انڈونیشیا، سری لنکا اور فلپائن سمیت جن جن ممالک پر پابندی عائد کی گئی ہے، ان ممالک میں موجود کسی شخص کو سعودی عرب داخل ہونے کی اجازت نہیں ہو گی۔ مذکورہ ممالک میں اگر کوئی سعودی اقامہ ہولڈر موجود ہے، تو وہ 72 گھنٹے کے اندر سعودی عرب واپس آ جائے، اس کے بعد کسی شخص کو مملکت میں داخل ہونے کی اجازت نہیں ہوگی۔ بتایا گیا ہے کہ سعودی حکومت نے مذکورہ ممالک میں کرونا کے دوبارہ اور تشویش ناک پھیلاو کی وجہ سے سفری پابندیاں عائد کی ہیں۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *