نئے ضوابط کا اعلان کر دیا

سعودی حکومت نے غیر ملکی عمرہ زائرین کے لیے نئے ضوابط کا اعلان کر دیا
کورونا سے محفوظ زائرین کو مخصوص ڈیجیٹل کڑا پہنایا جائے گا، جس میں ان کی تمام تر میڈیکل ہسٹری محفوظ ہو گی

ریاض ( اپریل2021ء) سعودی عرب میں رمضان کے دوران عمرہ زائرین کی تعداد میں بہت زیادہ اضافہ ہو جاتا ہے۔ اس حوالے سے سعودی حکومت نے اندرون ملک اور بیرون ملک سے آنے والے زائرین کے لیے نئی شرائط جاری کر دی ہیں۔ نائب وزیر حج وعمرہ ڈاکٹر عبدالفتاح مشاط نے کہا ہے کہ ’مقررہ ضوابط کے تحت اندرون اور بیرون ملک سے آنے والے عمرہ زائرین کے لیے ’توکلنا اور اعتمرنا‘ ایپ کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ اُردو نیوز کے مطابق خلیجی ممالک سے آنے والوں کے لیے لازمی ہے کہ انہوں نے کورونا سے بچاوٴ کے لیے سعودی عرب کی جانب سے منظور شدہ ویکسین کا کورس مکمل کیا ہو۔وزارت حج وعمرہ کی جانب سے مکہ آنے کے بعد خلیجی ممالک کے شہریوں کو عمرہ پرمٹ جاری کرنے کے حوالے سے جو نکات مقرر کیے ہیں ان کی پابندی کرنا لازمی ہوگا۔خلیجی ممالک کے شہریوں کے لیے لازمی ہوگا کہ وہ مکہ میں قائم نگہداشت کے مرکز سے عمرہ کی ادائیگی سے کم از کم چھ گھنٹے قبل رجوع کریں جہاں ان کی میڈیکل ہسٹری دیکھنے کے بعد ’محفوظ‘ کیٹیگری کی تصدیق کی جائے گی۔محفوظ کیٹیگری کی تحقیق ہونے کے بعد عمرہ زائر کو مخصوص ’ڈیجیٹل کڑا ‘ دیا جائے گا جس میں ان کے بارے میں مکمل کمپیوٹرائزڈ معلومات موجود ہوں گی۔ وزیر حج وعمرہ ڈاکٹر عبدالفتاح مشاط کا کہنا ہے کہ ’رمضان میں عمرہ زائرین کے استقبال کے لیے مقررہ ضوابط کے تحت احتیاطی تدابیر کو اختیار کرتے ہوئے تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ڈاکٹر مشاط نے اس امر کی بھی یقین دہانی کرائی کہ رمضان میں آنے والے عمرہ زائرین کی بڑی تعداد کے پیش نظر حرم مکی الشریف میں متعین کارکنوں کی تعداد میں بھی اضافہ کیا گیا ہے، جبکہ حرم شریف میں کام کرنے والوں کے لیے لازمی ویکسین اصول کو یقینی بنایا گیا ہے۔ نائب وزیر حج وعمرہ کا کہنا تھا کہ اندرون اور بیرون ملک سے عمرہ کرنے کے خواہاں مقررہ شرائط کے تحت مخصوص ایپ ’اعتمرنا اور توکلنا ‘ کے ذریعے عمرہ پرمٹ حاصل کر سکتے ہیں۔رمضان میں عمرہ ادا کرنے کے خواہش مند سوشل میڈیا پرعمرہ پرمٹ جاری کرانے کے دعویداروں سے ہوشیاررہیں۔ اعتمرنا اور توکلنا ایپ کے ذریعے عمرہ پرمٹ کا حصول انتہائی آسان بنایا گیا ہے۔‘

Sharing is caring!

Comments are closed.