سعودیہ میں کورونا کی وبا ایک بار پھر بے قابو

سعودیہ میں کورونا کی وبا ایک بار پھر بے قابو ، حالات لاک ڈاؤن کی طرف جا رہے ہیں
اگست 2020ء کے بعد پہلی مرتبہ یومیہ کیسز ایک ہزار سے بڑھ گئے، وزارت داخلہ نے سخت پیغام دے دیا

جدہ(21 اپریل2021ء) سعودی حکومت نے کورونا کی وبا سے نمٹنے کے لیے ہمیشہ بہترین اقدامات کیے ہیں جس کی وجہ سے گزشتہ سال یہ وبا قابو میں رہی ہے۔ تاہم گزشتہ چند ماہ کے دوران لوگوں کی بے احتیاطی کی وجہ سے معاملہ دوبارہ بگڑتا جا رہا ہے۔ سعودی وزارت صحت کی جانب سے جاری بیان نے خطرے کی گھنٹی بجا دی ہے۔ وزارت صحت کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ سعودیہ میں کورونا کیسز میں ایک بار پھر تیزی سے اضافہ ہو گیا ہے۔اگست 2020ء کے بعد پہلی بار سعودیہ میں کورونا کے یومیہ کیسز ایک ہزار کا ہندسہ عبور کر گئے ہیں۔ گزشتہ روز منگل کے روز 1070نئے کیسز رپورٹ ہوئے، جبکہ 12 کورونا مریض دُنیا سے رخصت ہو گئے ہیں۔ سعودی حکام کا کہنا ہے کہ لوگوں کی جانب سے احتیاطی تدابیر پر عمل نہ کرنا یومیہ کیسز میں اضافے کی وجہ بن رہا ہے۔نئے کیسز کے بعد مملکت میں کورونا کے مصدقہ کیسز کی گنتی 407010 ہوگئی ہے۔کورنا کے مرض سے 6846 افراد و-فات پاچکے ہیں۔گزشتہ روز مزید 940 مریض صحت یاب ہو گئے جس کے بعد مجموعی صحت یابیاں 390538 ہوگئی ہے۔سعودی وزارت داخلہ نے اہم بیان جاری کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزیاں جاری رہیں تو مملکت میں لاک ڈاؤن دوبارہ ہو سکتا ہے اور کئی شہروں کو مکمل طور پر بند کیا جا سکتا ہے، ٹرانسپورٹ پر بھی پابندی عائد کی جاسکتی ہے۔وزارت صحت کے مطابق سب سے زیادہ کیسز دارالحکومت ریاض میں رپورٹ ہوئے ہیں جن کی تعداد 483 ہے۔مکہ مکرمہ میں بھی گزشتہ روز 209 کیسز سامنے آئے جبکہ مشرقی ریجن میں 157 افراد میں کورونا کی تشخیص ہوئی ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ رواں سال جنوری میں سعودی عرب کورونا کی وبا پر قابو پانے کے بہت قریب پہنچ گیا تھا، جب یومیہ کیسز کی گنتی ایک سو کے ہندسے سے بھی نیچے آ گئی تھی۔ تاہم پھر لوگوں کی بے احتیاطیوں نے دوبارہ سے مملکت کو اس موذی وبا کی جانب دھکیل دیا ہے۔ پچھلے دو ماہ کے دوران کورونا کیسز میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ لوگوں کو ماسک پہننے ، سماجی فاصلہ برقرار رکھنے اور سینیٹائزیشن پر پوری طرح عمل کرنا ہو گا۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *