ایک بار پھر انسانیت کے دل جیت لیے

سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے ایک بار پھر انسانیت کے دل جیت لیے
رمضان المبارک کے دوران امدادی سامان بھجوانے میں سعودیہ اور یو اے ای سب سے آگے ہیں

دُبئی( 29 اپریل2021ء) سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کو مُسلم اُمہ کے قائدین ممالک کی حیثیت حاصل ہے۔ خصوصاً اسلامی ممالک کے پسماندہ اور بھوک افلاس کے مارے افراد کی مدد کے لیے یہ دونوں ممالک پیش پیش ہوتے ہیں۔ امارات اور سعودیہ نے رمضان کے مہینے میں پاکستان کے لیے بھی کروڑوں روپے کا امدادی سامان بھجوایا ہے تاکہ ان کے لیے افطار کا بندوبست ہو سکے۔ العربیہ نیوز کے مطابق سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات میں شہریوں اور مکینوں نے رمضان المبارک کے دوران میں اب تک دنیا بھر میں دربدرافراد اور مہاجرین کے لیے سب سے زیادہ رقوم جمع کی ہیں۔اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے مہاجرین (یو این ایچ سی آر) کے مینا کے خطے میں نجی شعبے کی شراکت داری کے سربراہ حسام شاہین نے بتایا ہے کہ ”خلیج تعاون کونسل کے رکن ممالک کے مکینوں نے دل کھول کر عطیات دیے ہیں۔ عطیات جمع کرنے کی اس مہم میں زکوٰة اور صدقات بھی وصول کیے جارہے ہیں تاکہ جنگ زدہ شام ،عراق ، یمن ، افغانستان ،نائجیریا ،ساحل کے خطے کے ممالک،پاکستان ،بھارت اور بنگلہ دیش میں روہنگیا مہاجرین کے لیے پناہ گاہوں کا انتظام ہوسکے، انھیں خوراک ، پینے کے صاف پینیاور ماہانہ نقد رقوم مہیا کی جاسکے۔“انھوں نے بتایا کہ ”اب تک یواین ایچ سی آر کے زکوٰة فنڈ میں یو اے ای کے لوگوں نے سب سے زیادہ عطیات جمع کرائے ہیں۔ ان کے بعد سعودی عرب کا نمبر ہے۔اس سے ان کی مہاجرین کے لیے ہمدردی اور غم گساری کا اظہار ہوتا ہے۔حسام شاہین کا کہنا تھا کہ ”کووِڈ-19 کی وَبا نے دنیا میں ایک نئی ہنگامی صورت حال پیدا کردی ہے اور پناہ گزین اور مہاجرین کے لیے گوناگوں مسائل پیدا کردیے ہیں۔وہ پہلے ہی غربت ، خوراک کے عدم تحفظ ، امتیازی سلوک اور سرحدوں کی بندش، جنسی استحصال اورزندگی کی گزربسر کے لیے درکار وسائل تک رسائی نہ ہونے ایسے مسائل سے دوچار ہیں۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *