بھارت پر سفری پابندیاں عائد

بھارت پر سفری پابندیاں عائد لیکن انڈین قسم کے کورونا کے کتنے مریضوں کی برطانیہ میں تصدیق ہوچکی؟ اعدادوشمار سامنے آگئے

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانوی حکومت نے پاکستان سمیت 40کے قریب ممالک کے شہریوں پر سفری پابندیاں عائد کر رکھی تھیں لیکن بھارت، جہاں کورونا وائرس نہ صرف تیزی سے پھیل رہا تھا بلکہ وہاں وائرس کی ایک نئی اور زیادہ خطرناک قسم سامنے آ چکی تھی، کے شہریوں پر گزشتہ روز سفری پابندیاں عائد کی گئیں۔ بھارتی شہریوں پر تاخیر سے پابندی عائد ہونے کا نتیجہ ہے کہ برطانیہ میں بھی کورونا وائرس کی بھارتی قسم کے مریضوں کی تعداد تیزی سے بڑھنے لگی ہے اور برطانوی حکومت کو اس معاملے پر اندرون ملک کڑی تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔میل آن لائن کے مطابق برطانیہ میں کورونا وائرس کی اس بھارتی قسم کے اب تک 215مریض سامنے آ چکے ہیں۔ اس قسم کے متعلق ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ کورونا کی دیگر اقسام کی نسبت زیادہ خطرناک ثابت ہو رہی ہے اور یہ زیادہ تیزی سے پھیلنے کی صلاحیت بھی رکھتی ہے۔ برطانوی شہریوں او رتنظیموں کی طرف سے حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے کہ اس نے بھارت جیسے ملک کو ریڈلسٹ میں شامل کرنے میں تاخیر کیوں کی، حالانکہ ان ممالک کو ریڈلسٹ میں بہت پہلے ڈال دیا گیا تھا جو کورونا وائرس سے برطانیہ سے بھی کم متاثر تھے، جن میں ایک پاکستان بھی شامل ہے۔ اسی تنقید کے پیش نظر آج برطانوی وزیراعظم بورس جانسن ایک پریس کانفرنس سے خطاب کریں گے اور اس حوالے سے سوالوں کے جوابات دیں گے کہ آخر انہیں بھارت کو ریڈلسٹ میں شامل کرنے میں تاخیر کیوں کرنی پڑی۔

 

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *