یہ وقت بھی آنا تھا۔۔!! جہانگیر ترین کی وزیر اعظم سے رابطے کی کوشش، عمران خان نے کیا کر دیا ؟

یہ وقت بھی آنا تھا۔۔!! جہانگیر ترین کی وزیر اعظم سے رابطے کی کوشش، عمران خان نے کیا کر دیا ؟
لاہور(نیوز ڈیسک ) وزیراعظم عمران خان نے جہانگیر ترین کے واٹس ایپ مسیجز نظر انداز کر دیے۔سٹی 42 نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ وزیراعظم اور جہانگیر ترین کا واٹس ایپ رابطہ مکمل طور پر منقطع ہوچکا ہے۔ جہانگیرترین نے گذشتہ چند ہفتوں میں وزیراعظم کو پانچ سےزائد میسج بھجوائے۔ جہانگیر ترین نے پارٹی سے اپنی وفاداری کے متعلق میسج بھیجے۔جہانگیر ترین نے اپنے کیسز میں وضاحت کا میسج بھی بھیجا۔ لندن سے واپسی پر جہانگیر ترین نے فون پر بھی وزیراعظم سے ایک مرتبہ رابطہ کیا، رابطہ وزیراعظم اور جہانگیر ترین کےمشترکا دوستوں کے مشورے پرہوا تھا۔وزیراعظم نے جہانگیر ترین کے حالیہ مسیجز کا کوئی جواب نہیں دیا، وزیراعظم شفاف اور بلاامتیاز احتساب پر کوئی سمجھوتہ کرنےکو تیار نہیں ہیں۔دوسری جانب تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین اپنی سیاسی طاقت کا مظاہرہ کر دیا، جہانگیر ترین نے اپنے ان ہم خیال سیاستدانوں کو عشائیہ پر مدعو کیا ہوا تھا۔ لاہور میں جہانگیر ترین سے ان کی رہائش گاہ پر28 صوبائی وزرا، مشیران، ممبران قومی و صوبائی اسمبلی اور ٹکٹ ہولڈرز نے ملاقات کی۔ ملاقات کرنے والوں میں صوبائی وزرا ملک نعمان لنگڑیال اور اجمل چیمہ، صوبائی مشیران عبدالحی دستی، امیر محمد خان، رفاقت گیلانی اور فیصل جبوانہ۔ ارکان قومی اسمبلی جاوید اقبال وڑائچ، راجہ ریاض، سمیع حسن گیلانی، ریاض مزاری، خواجہ شیراز، مبین عالم انور، غلام احمد لالی اور غلام بی بی بھروانہ۔ صوبائی ممبران اسمبلی خرم لغاری، اسلم بھروانہ، نذیر چوہان، آصف مجید، بلال وڑائچ، عمر آفتاب ڈھلوں، طاہر رندھاوا، زوار وڑائچ، نذیر بلوچ، امین چودھری، افتخار گوندل، غلام رسول سنگھا، سلمان نعیم اور سجاد وڑائچ شامل ہیں۔ذرائع کےمطابق عشائیہ میں ملکی سیاسی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ذرائع کے مطابق جہانگیر ترین اپنے اور اپنے بیٹے کے خلاف کیسز پر حکومت اور دوست عمران خان سے ناراض ہیں۔

Sharing is caring!

Comments are closed.