عمران خان کی پالیسیوں نے کام کر دکھایا

عمران خان کی پالیسیوں نے کام کر دکھایا!پاکستانی روپیہ اس وقت دنیا کی سب سے ’بہترین کرنسی‘ قرار

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) سال 2021ء میں پاکستانی روپیہ ڈالر سمیت دیگربین الاقوامی کرنسیوں کے خلاف بہتر کارکردگی دکھانے والی کرنسی بن گیا، یہ بات معاشی ماہرمزمل اسلم نے کی، انہوں نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ یکم جنوری سے 31 مارچ تک امریکی ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی روپیہ دنیا کی بہترین کرنسی رہی ہے، اسے اچھا قرار دیتے ہوئے کہا کہ یکساں مسابقت برقرار رکھنے کے لئے تشویش ہے۔ واضح رہے کہ مقامی کرنسی مارکیٹوں میں گزشتہ روز پاکستان روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر مزید گرتے ہوئے 153روپے کی سطح پر آگیاجب کہ یورو اور برطانوی پاونڈ کی قدر میں بھی کمی ریکارڈ کی گئی۔ فوریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے مطابق گزشتہ روز انٹر بینک میں امریکی ڈالر کی قیمت خرید153.10روپے سے گھٹ کر152.80روپے اور قیمت فروخت153.20روپے سے گھٹ کر153روپے ہوگئی جب کہ اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید153.20روپے سے گھٹ کر152.70روپے اور قیمت فروخت153.50روپے سے گھٹ کر153.20روپے ہوگئی۔دیگر کرنسیوں میں یورو کی قیمت خرید178روپے سے گھٹ کر177.50روپے اور قیمت فروخت180روپے سے گھٹ کر179.30روپے ہوگئی جب کہ برطانوی پاونڈ کی قیمت خرید209روپے سے گھٹ کر208.50روپے اور قیمت فروخت211روپے سے گھٹ کر210.50روپے ہوگئی۔ پاکستانی روپے نے دوسری کرنسیوں کے خلاف بھی بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔دوسری جانب اسٹیٹ بینک نے کال سینٹروں کو بہتر بنانے کے لیے بینکوں کو جامع ہدایات جاری کردیں۔مرکزی بینک نے بینکوں کو 30 جون 2021ء تک کی ڈیڈ لائن دیتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ بینکوں اور صارفین کے تعلق میں کال سینٹروں کی بڑھتی ہوئی اہمیت کے پیش نظر بینکوں کے لیے ضروری ہوگیا ہے کہ صارفین کے بہتر تجربے کی خاطر اپنے کال سینٹروں کا انتظام مؤثر بنائیں۔ حال ہی میں بینک دولت پاکستان نے بینکوں میں کال سینٹروں کے انتظام کا ایک موضوعاتی جائزہ لیا۔ اس جائزے کے نتائج کی روشنی میں اسٹیٹ بینک نے بینکوں کو کال سینٹروں کے انتظام کے بارے میں ضوابطی ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا گیا کہ شکایات کے اندراج میں سہولت مہیا کرنے کے لیے تمام بینکوں کو ترغیب دی گئی ہے کہ اپنے کال سینٹروں پر ٹول فری نمبر فراہم کریں اور اس امر کو یقینی بنائیں کہ کال سینٹر

Sharing is caring!

Comments are closed.