خصوصی مہمان کی پاکستان آمد کا اعلان

بھارت کا سب سے بڑا اتحادی روس بھی پاکستان سے بہتر تعلقات کا خواہاں، روس سے خصوصی مہمان کی پاکستان آمد کا اعلان
روسی وزیر خارجہ چھ اپریل پاکستان کے دورے پر آرہے ہے ہیں ،روس کے وزیر خارجہ کے دورے سے دونوں ممالک کے مابین باہمی تعاون کو مزید مدد ملے گی: ترجمان وزیر خارجہ

اسلام آباد ( 02 اپریل2021ء) بھارت کا سب سے بڑا اتحادی روس بھی پاکستان سے بہتر تعلقات کا خواہاں، روس سے خصوصی مہمان کی پاکستان آمد کا اعلان۔ تفصیلات کے مطابق جمعہ کے روز ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے ہفتہ وار پریس بریفنگ میں بتایا کہ روسی وزیر خارجہ چھ اپریل پاکستان کے دورے پر آرہے ہے ہیں ،روس کے وزیر خارجہ کے دورے سے دونوں ممالک کے مابین باہمی تعاون کو مزید مدد ملے گی۔انہوںنے ایک بار پھر کہاکہ خطے میں امن اور استحکام کیلئے تصفیہ طلب تنازعات کا حل ناگزیر ہے،پاکستان جیو اسٹریٹیجک سے جیو اکنامکس کی طرف منتقل ہو چکا ،مستقبل میں جو اقدامات ہونگے اس میں جیو اکنامکس کو مدنظر رکھا جائے گا ۔ ترجمان نے مزید کہاکہ بھارتی قابض فوسز نے دو ہفتوں میں مزید چھ کشمیری شہید کر دئیے،پاکستان ماورائے عدالت اور نام نہاد سرچ آپریشن کی مذمت کرتا ہے ،بھارتی اقدامات عالمی قوانین کی خلاف ورزی ہے ،پاکستان کشمیر میں ماورائے عدالت قتل کی جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ کرتا ہے۔ترجمان دفترخارجہ نے کہاکہ وفاقی کابینہ نے بھارت سے چینی اور کاٹن کی درآمد کی سمری موخر کردی ہے،وزیرخارجہ کا اس حوالے سے بڑا واضح بیان ہوچکا ہے،بھارتی وزیر اعظم نے 23 مارچ کو وزیراعظم عمران خان کو خط لکھا اور یوم پاکستان کی مبارکباد دی،اپنے جوابی خط میں عمران خان نے بھارت سمیت تمام ہمسایوں سے پرامن مستحکم تعلقات کی خواہش کا اظہار کیا۔ انہوںنے کہاکہ وزیراعظم عمران نے اپنے خط میں کہا کہ بہتر تعلقات کے لئے تمام تنازعات بالخصوص تنازعہ کشمیر کا حل ضروری ہے،پاکستان کا جموں و کشمیر اور بھارت سے مزاکرات کے حوالے سے موقف تبدیل نہیں ہوا،پاکستان سمجھتا ہے مذاکرات کے لئے کشمیر کے مسئلہ کا حل ضروری ہے،بامقصد نتیجہ خیز مزاکرات کے لیے موذوں ماحول ضروری ہے۔ انہوں نے کہاکہ امریکی خارجہ امور کی مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی رپورٹ کا خیرمقدم کرتے ہیں۔

Sharing is caring!

Comments are closed.