عملدرآمد شروع کر دیا گیا

سعودی عرب میں کفیل سسٹم کے خاتمے پر عملدرآمد شروع کر دیا گیا

کویت مارچ : سعودی عرب میں برسوں سے رائج کفیل سسٹم کو آخرکار منسوخ کردیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق سعودی عرب نے برسوں سے رائج اسپانسرشپ (کفیل) سسٹم کو آخر کار ختم کردیا ہے۔ سعودی حکام نے نجی شعبے میں مزدوروں کے لئے معاہدہ تعلقات کو بہتر بنانے کے پیش نظر سلطنت میں کئی سالوں سے نافذ رہنے والے کفیل سسٹم کو منسوخ کرنا شروع کردیا ہے اس حوالے سے وزارت انسانی وسائل نے گذشتہ نومبر میں فیصلہ لیا تھا تاہم اب اس پر عمل درآمد شروع ہوچکا ہے۔سعودی وزارت انسانی وسائل نے اعلان کیا ہے کہ معاہدے کے تعلقات میں بہتری لانے کے اقدام کے تحت فراہم کی جانے والی خدمات میں ملازمت کی تبدیلی ہے جو ایک تارکین وطن کارکن کو کفیل کی منظوری کے بغیر کام کے معاہدے کی میعاد ختم ہونے پر نئی ملازمت پر منتقل ہونے کی اجازت دیتی ہے۔اس اقدام میں خارجی اور داخلی سروس “ایگزٹ اینڈ ریٹرن” بھی شامل ہے جو ایک تارکین وطن کارکن کو آجر یعنی کفیل کو آن لائن اطلاع کے ساتھ درخواست جمع کروانے کے بعد مملکت سے باہر سفر کرنے کی اجازت دیتا ہے۔

 

Sharing is caring!

Comments are closed.