عربی لوگ جُبہ کیوں پہنتے ہیں

عربی لوگ جُبہ کیوں پہنتے ہیں؟ وہ دلچسپ باتیں جو بہت کم لوگ جانتے ہیں

لباس آپ کی شخصیت کی پہچان بن گیا ہے، آج کا دور لباس کی بناء پر لوگوں کو جانتا ہے کہ اگر لباس نفیس اور حسین ہے تو یقیناً انسان بھی نفیس اور حسین ہے، جبکہ یہ شاید ضروری نہیں ہے کہ لباس ہی آپ کی اصل شخصیت کو ظاہر کرے . اب ہر علاقے میں رہنے والے لوگوں کا لباس دوسرے سے منفرد ہوتا ہے .اسی طرح عربی لوگوں کا لباس دیکھیں تو وہ دوسروں سے منفرد ہوتا ہے عربی ایک خاص قسم کا لباس پہنتے ہیں جسے جُبہ کہتے ہیں. دنیا بھر میں جُبہ کی ایک الگ پہچان ہے اور یہ زیادہ تر ربی لوگ ہی پہنے دکھائی دیتے ہیں. لیکن اس کو پہننے کی وجہ کیا ہے؟عربی لوگ یہ جُبہ اس لئے پہنتے ہیں کیونکہ ان میں ایک عام رواج اور پُرانی روایت ہے کہ جو شخص زیادہ نفیس، خوبصورت، حسین اور مالدار ہے وہی اس لباس کو پہنتا ہے، دراصل یہ لباس خاندانی اور روایتی لوگوں کی خاص پہچان ہے. اب ہر کوئی جُبہ پہنتا ہے، مگر عرب میں اعلیٰ نسل کے جُبے ملتے ہیں جو شیخ اور مشائخ ہی پہن سکتے ہیں، کیونکہ یہ سونے کے تاروں سے مل کر بنتے ہیں. پہلے یہ صرف سفید رنگ میں ہوتا تھا اب یہ ہر رنگ میں دستیاب ہوتا ہے.چند حیرت انگیز باتیںعرب ممالک میں لوگ مختلف ایسے کام کرتے ہیں

 

Sharing is caring!

Comments are closed.