سعودی عرب کا دورہ کرنے کا فیصلہ

وزیراعظم کی جانب سے سعودی عرب کا دورہ کرنے کا فیصلہ
عمران خان نے پیر کے روز سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی جانب سے مملکت کے دورے کیلئے دی گئی دعوت قبول کر لی

اسلام آباد (29 مارچ2021ء) وزیراعظم کی جانب سے سعودی عرب کا دورہ کرنے کا فیصلہ۔ تفصیلات کے مطابق پیر کے روز وزیراعظم کا خط موصول ہونے کے بعد سعودی ولی عہد نے محمد بن سلمان نے ٹیلی فونک رابطہ کر کے عمران خان سے ان کی خیریت دریافت کی۔ رابطے کے دوران سعودی ولی عہد کی جانب سے وزیراعظم پاکستان کو سعودی عرب کا دورہ کرنے کی خصوصی دعوت دی گئی جو عمران خان کی جانب سے قبول کر لی گئی۔ اس رابطے کے دوران سعودی ولی عہد نے پاکستان کے بلین ٹری سونامی منصوبے کا حصہ بننے کی خواہش کا اظہار بھی کیا۔ جبکہ دونوں رہنماوں نے عہد کیا کہ پاکستان اور سعودی عرب ماحولیاتی منصوبوں پر مل کر کام کرینگے۔ اس سے قبل وزیراعظم عمران خان نے سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کو خط لکھ کر ان کے والد سعودی فرمانروا سلمان بن عبدالعزیز کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ انھوں نے سعودی حکومت صحت کی جانب سے مملکت میں دس عرب اور خطے میں پچاس ارب درخت لگانے کے فیصلے کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب اور پاکستان کے بلین ٹری سونامی پروگرام میں مماثلت ہے۔2014 سے 2018 کے دوران ہم نے ایک ارب درخت لگائے۔2023 تک دس ارب درخت لگانے کا منصوبہ ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ 15 فیصد زمینی اور 10 فیصد سمندری سطح پر پودے لگائیں گے۔ منصوبے سے ایکو ٹورازم کو فروغ ملے گا اور ملازمتیں بھی پیدا ہوگئی۔2030 تک 60 فیصد انرجی کو کلین انرجی پر شفٹ کر رہے ہیں۔سعودی عرب کے گرین منصوبے کی حمایت کرتے ہیں ۔سعودی عرب کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہتے ہیں۔وزیراعظم عمران خان نے اسی حوالے سے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ میں اپنے بھائی محمد بن سلمان کی جانب سے ’گرین سعودی عرب ‘ اور ’گرین مڈل ایسٹ‘ کا منصوبہ شروع کرنے کا جان کر خوشی ہوئی۔

Sharing is caring!

Comments are closed.