دوبارہ سے اضافہ ہونے لگا

منافع خور پھر سے سرگرم، مرغی کے گوشت کی قیمت میں دوبارہ سے اضافہ ہونے لگا
پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں برائلر گوشت کی فی کلو قیمت ایک ہی دن میں 22 روپے کے اضافے سے 300 روپے کی سطح پر آگئی

لاہور(۔ 18 مارچ2021ء) منافع خور پھر سے سرگرم، مرغی کے گوشت کی قیمت میں دوبارہ سے اضافہ ہونے لگا۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ دنوں ملک بھر میں مرغی کے گوشت کی قیمت میں اضافے کے تمام ہی ریکارڈ ٹوٹ گئے تھے۔ بتایا گیا تھا کہ ملک کی تاریخ میں کبھی مرغی کے گوشت کی قیمت میں اس قدر ہوشربا اضافہ ریکارڈ نہیں کیا گیا۔ سب سے زیادہ اضافہ ملک کے سب سے بڑے شہر کراچی میں ریکارڈ کیا گیا، جہاں برائلر گوشت کی فی کلو قیمت 500 روپے کی سطح بھی عبور کر گئی تھی۔
جبکہ لاہور اور دیگر شہروں میں برائلر گوشت کی قیمت 400 روپے فی کلو تک پہنچ گئی تھی۔ پولٹری فارمرز کی جانب سے دعویٰ کیا گیا کہ پیداوار میں کمی اور مرغیوں کی فیڈ کی قیمت میں اضافے کی وجہ سے برائلر گوشت کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔جبکہ عوام نے یہ دعویٰ مسترد کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ مارکیٹ میں طلب اور رسد کا مصنوعی بحران پیدا کر کے برائلر گوشت کی قیمت میں اضافہ کیا گیا ہے۔قیمتوں میں ہوشربا اضافے کے بعد عوام نے مرغی کے گوشت کے بائیکاٹ کی مہم چلائی جس کی وجہ سے مارکیٹ میں چند ہی روز میں مرغی کی طلب میں زبردست کمی ہوئی۔ طلب میں کمی کی وجہ سے چند ہی روز میں مرغی کی قیمت میں زبردست کمی آئی ۔ تاہم قیمتوں میں کمی کے بعد عوام نے دوبارہ سے برائلر گوشت کی خریداری معمول کے مطابق شروع کر دی، جس کی وجہ سے لاہور سمیت کئی شہروں میں قیمتوں میں دوبارہ اضافہ ہونا شروع ہوگیا۔ بتایا گیا ہے کہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں برائلر گوشت کی فی کلو قیمت ایک ہی دن میں 22 روپے کے اضافے سے 300 روپے کی سطح پر آگئی۔ شہر میں پرچون سطح پر برائلر گوشت کی قیمت 22روپے اضافے سے299روپے، جبکہ زندہ برائلر مرغی کی قیمت15روپے اضافے سے191روپے فی کلو ہوگئی ہے۔ پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن کے ترجمان کے مطابق کووڈ19 کی وجہ سے ہونے والے لاک ڈائون کے خاتمے کے بعد تقریبات اور بالخصوص شادیوں کے بے تحاشہ تقریبات کی وجہ سے مرغی کے گوشت کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ ہورہاہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.