بے پناہ طاقت کا زریعہ

جنتی پھل ،بے پناہ طاقت کا زریعہ

نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ”اپنی حاملہ عورتوں کو سفرجل کھلایا کرو کیونکہ یہ دل کی بیماریوں کو ٹھیک کرتا ہے اور لڑکے کو حسین بناتا ہے، نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ”سفر جل کھاﺅ کیونکہ یہ دل کے دورے کو ٹھیک کرکے سینہ سے بوجھ اتار دیتا ہے، یہ دل کو طاقت دیتا ہے، سانس کو خوشبودار بناتا ہے بہی (سفر جل) کو ہندی میں بیل، فارسی میں شُبل، سنسکرت میں وسعت کی دیوی، انگریزی میں کوئنس کہتے ہیں یہ ایک سیب کی شکل کا پھل ہے جو جنگلوں میں خودرو بھی ہے اور کاشت بھی کیا جاتا ہے۔ ہندی دیو مالا کے مطابق یہ پھل زرخیزی، وسعت رزق اور فارغ البالی کی علامت ہے۔ اسے بھگوان سوکاپرتو قرار دے کر ہندو اس کی پوجا کرتے ہیں اور مندروں میں پوجا کے دوران اس کی موجودگی باعث برکت خیال کی جاتی ہے۔ احادیث کی روشنی میں حضرت طلحہ رضی اللہ عنہ بن عبیداللہ روایت فرماتے ہیں کہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں حاضر ہوا تو وہ اس وقت اپنے اصحاب کی مجلس میں تھے ان کے ہاتھ میں سفرجل تھا جس سے وہ کھیل رہے تھے جب میں بیٹھ گیا تو انہوں نے اسے میری طرف کرکے کہا۔ اے اباذر! یہ دل کو طاقت دیتا ہے، سانس کو خوشبودار بناتا ہے اور سینہ سے بوجھ کو اتار دیتا ہے۔ حضرت جابر بن عبداللہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ”سفر جل کھاﺅ کیونکہ یہ دل کے دورے کو ٹھیک کرکے سینہ سے بوجھ اتار دیتا ہے (القالی، فی امالیہ، حوالہ کنزالعمال) سفرجل کھانے سے دل پر سے بوجھ اتر جاتا ہے۔

 

Sharing is caring!

Comments are closed.