انتخابی اصلاحات تیار کرنے کی ہدایت

وزیراعظم عمران خان کی ہنگامی طور پر انتخابی اصلاحات تیار کرنے کی ہدایت
سینیٹ الیکشن میں کھلا بازار لگا، الیکشن کمیشن کونوٹس لینا چاہیے تھا، آئندہ الیکشن میں اوورسیز کا ووٹنگ کا حق اور آئی ووٹنگ کا وعدہ پورا کریں گے۔ وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت کابینہ کا اجلاس

اسلام آباد ( 16 مارچ2021ء) وزیراعظم عمران خان نے ہنگامی طور پر انتخابی اصلاحات تیار کرنے کی ہدایت کردی، انہوں نے کہا کہ سینیٹ الیکشن میں کھلا بازار لگا، الیکشن کمیشن کونوٹس لینا چاہیے تھا، آئندہ الیکشن میں اوورسیز کا ووٹنگ کا حق اور آئی ووٹنگ کا وعدہ پورا کریں گے۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا، جس میں سیاسی معاشی اورپی ڈی ایم کے لانگ مارچ، انتخابی اصلاحات سمیت طے شدہ ایجنڈے پر بات چیت کی گئی۔کابینہ اجلاس میں الیکشن کمیشن اور پی ڈی ایم پر کڑی تنقید کی گئی۔ اسی طرح کابینہ ارکان نے رائے دی کہ الیکشن کمیشن غیرجانبدار نہیں رہا۔ الیکشن کمیشن کو مستعفی ہوجانا چاہیے الیکشن کمیشن کا ڈسکہ اور سینیٹ انتخابات میں کردار متنازع رہا۔اجلاس میں الیکشن کمیشن، پی ڈی ایم، انتخابی اصلاحات، پٹرول قلت رپورٹ اور بلوچستان کے معاملات پرغور کیا گیا۔وزیراعظم نے کابینہ اجلاس میں الیکشن کمیشن سے متعلق تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سینیٹ الیکشن میں کھلا بازار لگا،الیکشن کمیشن کونوٹس لینا چاہیے تھا۔ سپریم کورٹ کے احکامات الیکشن کو شفاف بنانے کا جواز تھا۔ الیکشن کمیشن کے ایسے فیصلے آئے ہیں کہ کوئی بھی مطمئن نہیں تھا۔ وزیراعظم نے انتخابی اصلاحات کی ہنگامی طورپر تیاریوں کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ اوورسیز سے ووٹنگ کا حق اور آئی ووٹنگ کا وعدہ پورا کریں گے۔وزیراعظم نے مختلف وزراء کو بھی ہر مہینے بلوچستان کا دورہ کرنے کا حکم دیا انہوں نے کہا کہ بلوچستان کی محرومیاں ختم کرنے میں وفاق بھرپورکردارادا کرےگا۔ وزیراعظم نے زیارت میں مقامی لوگوں کوفوری گیس کی فراہمی کی ہدایت کردی۔ انہوں نے کابینہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پی ڈی ایم کے فیصلے بیوقوفانہ ہیں اورپی ڈی ایم انتشار پھیلا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مہنگائی سمیت عوامی مسائل کا ادراک ہے، مہنگائی پر قابو پانے کیلئے اقدامات کررہے ہیں، اپوزیشن کو انتخابی اصلاحات پر مذاکرات کی دعوت دی ہے۔ اجلاس کے بعد وفاقی وزیر فواد چودھری اور حماد اظہر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کابینہ نے 7.8 ارب روپے رمضان پیکج کی منظوری دے دی ہے، کوشش ہے عوام بالخصوص غریب طبقے پر رمضان میں بوجھ نہیں پڑنا چاہیے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.