اماراتی حکومت کا ایک نوجوان

’گاڑی کا انجن اسٹارٹ چھوڑ کر دائیں بائیں ہوئے تو جرمانہ ہوگا“
اماراتی حکومت نے ایک نوجوان کے ساتھ پیش آنے والی واردات کے بعد خبردار کر دیا

دُبئی(23مارچ2021ء) اماراتی پبلک پراسیکیوشن نے تمام ڈرائیورز کو خبردار کیا ہے کہ وہ اپنی گاڑی شاپنگ مالز یا کسی اسٹور کے باہر ایک منٹ کے لیے بھی اسٹارٹ حالت میں نہ چھوڑیں، ورنہ انہیں گاڑی کی چوری کا نقصان برداشت کرنا پڑے گا اور ان پر 3 سو درہم کا جرمانہ بھی عائد ہو گا۔ پبلک پراسیکیوشن کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ ایک نوجوان اپنی اس غلطی کی وجہ سے گاڑی چوری کروا بیٹھا جو ایک جنرل اسٹور کچھ سامان خریدنے آیا تھا۔اس نوجوان نے اپنی جانب سے سوچا کہ وہ دو تین منٹ میں مطلوبہ سامان خرید کر واپس آ جائے گا، اس لیے گاڑی کا انجن بند کرنے کی کیا ضرورت ہے۔ تاہم اس کی یہ سوچ بہت بھاری پڑ گئی۔ چند منٹ بعد ہی جب وہ باہر آیا تو اس کی گاڑی کہیں نظر نہیں آئی۔پہلے وہ یہی سمجھتا رہا کہ اس کے ایک دوست نے مذاق کیا ہے جو وہیں پر اسے نظر آیا تھا۔ اس نے مطمئن ہو کر دوست کو فون کیا اور اس سے گاڑی لے جانے کے مذاق کے بارے میں پوچھا۔تاہم اس کی جانب سے انکار پر نوجوان پریشان ہو گیا کہ واقعی اس کی گاڑی کوئی چُرا لے گیا ہے۔ جس کے بعد نوجوان نے پولیس کو واقعہ سے آگاہ کر دیا۔ جب آس پاس نصب سی سی ٹی وی کیمروں کی ریکارڈنگ چیک کی گئی تو پتا چلا کہ وہیں موجود ایک کم سن لڑکے نے جب گاڑی کو اسٹارٹ حالت میں دیکھا تو اسی لمحے تیزی سے گاڑی بھگا کر لے اُڑا۔ تاہم ایک موقع پر گاڑی کا پٹرول ختم ہو گیا تو اسے مجبوراً گاڑی کو سڑک کنارے چھوڑنا پڑا۔

Sharing is caring!

Comments are closed.