یقیناً آپ کو بھی معلوم نہیں ہوگی

بجلی کی تاروں پر بیٹھے پرندوں کو کرنٹ کیوں نہیں لگتا؟ وجہ یقیناً آپ کو بھی معلوم نہیں ہوگی ۔۔۔

پرندے بجلی کی تاروں پر اکثر بیٹھے دکھائی دیتے ہیں، کبھی ایک تار پر تو اڑ کر کبھی دوسرے تار پر جاکر بیٹھ جاتے ہیں اور یوں شان سے بیٹھتے ہیں جیسے انھیں کوئی خوف نہ ڈر بجلی کے کرنٹ کا۔ کیا آپ جانتے ہیں کہ بجلی کی تاروں پر مزے سے بیٹھے باتیں کرتے پرندوں کو بجلی کا کرنٹ کیوں نہیں لگتا ہے؟ پرندوں میں ایسی کیا خاص بات ہے کہ ان کو کرنٹ نہیں لگتا یا تو کم لگتا ہے؟ اس کی وجہ یہ ہے کہ بجلی کے آپ نے ہمیشہ سے دو ہی تار دیکھے ہوں گے جو بجلی کی فراہمی اور کرنٹ کی منتقلی کے لیئے استعمال ہعتے ہیں یعنی ایک کالا تار اور ایک لال تار۔ ایک تار کے ذریعے کرنٹ آتا ہے اور دوسرے کے ذریعے کرنٹ جاتا ہے جوکہ ملا کر ایک سرکٹ مکمل کرتے ہیں۔ اب یہاں بات یہ ہے کہ پرندے تو تاروں پر آ کر بیٹھتے ہیں پھر انھیں کیوں کرنٹ نہیں لگتا؟ دراصل ہرندوں کی پنجے قدرتی طور پر ہائی رزسٹر یعنی کہ ان کے پنجوں میں ہی کرنٹ کی مزاحمت کرنے کی طاقت پائی جاتی ہے، جس کی وجہ سے ان کو کرنٹ نہیں لگتا یا پھر کم لگتا ہے۔ اور دوسری خاص وجہ یہ ہے کہ پرندے بیک وقت پول پر لگے کسی بھی دو تاروں پر نہیں بلکہ ایک ہی تا پر بیٹھتے ہیں اور جب ایک ہی تار پر بیٹھتے ہیں تو سرکٹ مکمل نہیں ہو پاتا یہی وجہ ہے کہ ان کو کرنٹ نہیں لگتا۔ وہیں دوسری طرف بڑے پرندوں کو کرنٹ اس لیئے لگتا ہے کیونکہ وہ ایک تار پر بیٹھ تو جاتے ہیں مگر ان کے پر کیونکہ بڑے ہوتے یں وہ دوسرے تار سے بھی ٹکراتے ہیں اور اس طرح ٹکرانے کی وجہ سے کرنٹ لگتا ہے اور یوں کئی پرندے مر بھی جاتے ہیں۔ پرندے بجلی کی تاروں پر اکثر بیٹھے دکھائی دیتے ہیں، کبھی ایک تار پر تو اڑ کر کبھی دوسرے تار پر جاکر بیٹھ جاتے ہیں اور یوں شان سے بیٹھتے ہیں جیسے انھیں کوئی خوف نہ ڈر بجلی کے کرنٹ کا۔ کیا آپ جانتے ہیں کہ بجلی کی تاروں پر مزے سے بیٹھے باتیں کرتے پرندوں کو بجلی کا کرنٹ کیوں نہیں لگتا ہے؟ پرندوں میں ایسی کیا خاص بات ہے کہ ان کو کرنٹ نہیں لگتا یا تو کم لگتا ہے؟ اس کی وجہ یہ ہے کہ بجلی کے آپ نے ہمیشہ سے دو ہی تار دیکھے ہوں گے جو بجلی کی فراہمی اور کرنٹ کی منتقلی کے لیئے استعمال ہعتے ہیں یعنی ایک کالا تار اور ایک لال تار۔ ایک تار کے ذریعے کرنٹ آتا ہے اور دوسرے کے ذریعے کرنٹ جاتا ہے جوکہ ملا کر ایک سرکٹ مکمل کرتے ہیں۔ اب یہاں بات یہ ہے کہ پرندے تو تاروں پر آ کر بیٹھتے ہیں پھر انھیں کیوں کرنٹ نہیں لگتا؟ دراصل ہرندوں کی پنجے قدرتی طور پر ہائی رزسٹر یعنی کہ ان کے پنجوں میں ہی کرنٹ کی مزاحمت کرنے کی طاقت پائی جاتی ہے، جس کی وجہ سے ان کو کرنٹ نہیں لگتا یا پھر کم لگتا ہے۔ اور دوسری خاص وجہ یہ ہے کہ پرندے بیک وقت پول پر لگے کسی بھی دو تاروں پر نہیں بلکہ ایک ہی تا پر بیٹھتے ہیں اور جب ایک ہی تار پر بیٹھتے ہیں تو سرکٹ مکمل نہیں ہو پاتا یہی وجہ ہے کہ ان کو کرنٹ نہیں لگتا۔ وہیں دوسری طرف بڑے پرندوں کو کرنٹ اس لیئے لگتا ہے کیونکہ وہ ایک تار پر بیٹھ تو جاتے ہیں مگر ان کے پر کیونکہ بڑے ہوتے یں وہ دوسرے تار سے بھی ٹکراتے ہیں اور اس طرح ٹکرانے کی وجہ سے کرنٹ لگتا ہے اور یوں کئی پرندے مر بھی جاتے ہیں۔

 

Sharing is caring!

Comments are closed.