مدارس حکومتی فیصلوں کی پابندی کریں

مساجد پر پابندی نہیں، مدارس حکومتی فیصلوں کی پابندی کریں، شفقت محمود , مساجد میں قرآن کریم اور حدیث نبوی صلى الله عليه وسلم کا درس جاری رہے گا، تعلیمی اداروں اور مدارس کے ہوسٹلز میں صرف 35 فیصد طلباء کو رہنے کی اجازت ہوگی۔ وفاقی وزیر تعلیم کا ٹویٹ

لاہور( 30 نومبر2020ء) وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا ہے کہ مساجد پر پابندی نہیں، مدارس حکومتی فیصلوں کی پابندی کریں، مساجد میں قرآن کریم اور حدیث نبوی صلى الله عليه وسلم کا درس جاری رہے گا، تعلیمی اداروں اور مدارس کے ہوسٹلز میں صرف35 فیصد طلباء کو رہنے کی اجازت ہوگی۔انہوں نے اتحاد تنظیمات مدارس کے اجلاس کے بعد ٹویٹر پر اپنے ٹویٹ میں کہا کہ کورونا وباء کے پھیلاؤ میں تیزی کے بعد تعلیمی اداروں کی بندش کے حوالے سے اتحاد تنظیمات مدارس کے رہنماؤں کا اجلاس ہوا۔جس میں اتحاد تنظیمات مدارسکے علماء نے یقین دہانی کروائی کہ ای سی اوسی کے تمام فیصلوں کی پاسداری کی جائے گی۔انہوں نے اپنے ٹویٹ میں مزید کہا کہ مدارس حکومتی فیصلے کی پابندی کریں گے،مساجد پر این سی اوسی کی طرف سے کوئی پابندی نہیں ہے۔وہاں پر قرآن کریم اور حدیث نبوی صلى الله عليه وسلم کا درس معمول کے مطابق ہوگا۔تمام تعلیمی اداروں کے ہوسٹلز میں 35فیصد طلباء کو رہنے کی اجازت ہے۔واضح رہے حکومت نے ای سی اوسی کی سفارشات پر تعلیمی اداروں میں10جنوری تک چھٹیاں کی ہوئی ہیں۔ جبکہ کاروباری اور دوسری سرگرمیوں کیلئے بھی ایس اوپیز جاری کر رکھے ہیں۔اسی طرح کوروبا کے باعث حکومت نے پنجاب کے مختلف علاقوں میں اسمارٹ لاک ڈاوَن نافذ کردیا ہے۔ سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئرپنجاب کے مطابق کورونا وباء کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر پنجاب کے مختلف علاقوں میں8 دسمبر تک اسمارٹ لاک ڈاوَن کا نافذ کردیا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.