یتیم بچوں کے لئے دارالاحساس کا قیام

وزیراعظم کے ریاستِ مدینہ کے خواب کو پورا کرنے کے لئے پاکستان بیت المال کیا خدمات سرانجام دے رہا ہے؟تفصیلات جانئے

اسلام آباد( آن لائن)وزیراعظم عمران خان کے ریاست مدینہ کےخواب کو عملی شکل دینے کے لئے پاکستان بیت المال یتیم بچوں کےلئےدارالاحساس، چائلڈ لیبر کے خاتمے کے مراکز اور وومن ایمپاورمنٹ سینٹرزسمیت معاشرے کے غریب افراد کو علاج معالجہ کی سہولیات فراہم کر رہا ہے۔پاکستان بیت المال کی جانب سے یتیم بچوں کے لئے دارالاحساس کا قیام اسلامی فلاحی ریاست کی جانب ایک اور قدم ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق ملک بھر کےہر دارالاحساس مرکز میں4سے6سال تک کی عمر کے100بچےرہائش پذیر ہیں۔دارالاحساس میں رہائش پذیر بچوں کو ایک فیملی یونٹ میں مفت فرنشڈ رہائش،مفت متوازن غذاجس میں اشتہ،دوپہراوررات کا کھانا،شہرکےبہترین سکولوں میں میٹرک اور اس سےآگےکی تعلیم،مفت یونیفارم، کتب اورسٹیشنری،موسم سرما اور موسم گرما کا لباس، سرکاری ہسپتالوں میں طبیسہولت،سکلز ڈویلپمنٹ، مفت لانڈری خدمات، نماز کی سہولت اور دینی تعلیمکی سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں۔ اس کے علاوہ تشدد اور بدسلوکی کے شکار بچوں کو مشاورت اور قانونی امداد بھی فراہم کی جاتی ہے۔ گزشتہ مالی سال 2019-20ءکے دوران ملک بھر میں 1730 نئے یتیم بچو ں کو دارالاحساس میںرجسٹر کیا گیا جہاں انہیں گھر جیسے ماحول میں صاف ستھرا کھانا اور بہترین تعلیم و تربیت کو ممکن بنایا جا رہا ہے۔ پاکستان بیت المال میں انفرادی مالی معاونت(آئی ایف اے)پروگرام کےتحت غریب، بیوہ خواتین، بے سہاراخواتین، یتیم اور معذ-ور افراد کی عمومی امداد، تعلیم، طبی علاج اور بحالی کے ذریعے مدد فراہم کی جا رہی ہے۔اس منصوبےکامقصدغریب افراد کی فوری مدد کرنا،غریب مریضوں کو معذ-وری یا کسی بڑے بیماری کے لئے طبی امداد کی فراہمی،غریب افراد کو معاشی طور پر بااختیار بنانا،سرکاری شعبہ کےتعلیمی اور تکنیکی ادارے میں زیر تعلیم مستحق اور ذہین غریب طلباءکوتعلیمی وظائف کی فراہمی ہے۔

 

Sharing is caring!

Comments are closed.