سعودی عرب میں ہُنڈی کا کاروبار کرنے والا پاکستانی ساتھیوں سمیت گرفتار

سعودی عرب میں ہُنڈی کا کاروبار کرنے والا پاکستانی ساتھیوں سمیت گرفتار

ملزمان سعودی شہریوں کے نام سے رجسٹرڈ بینک کھاتوں کے ذریعے غیر قانونی طریقے سے رقوم بیرون مملکت بھجواتے تھے
ریاض سعودی عرب میں ہُنڈی کا کاروبار کرنے والا پاکستانی باشندہ اپنے دیگر ساتھیوں سمیت گرفتار کر لیا گیا ۔ ملزمان کے گروپ میں کئی ممالک میں باشندے شامل ہیں۔ العربیہ نیوز کے مطابق ریاض پولیس نے ’ہنڈی‘ کا کاروبار کرنے والے غیر ملکی گروہ کو گرفتار کیا ہے۔ پولیس اہلکار گروہ کی غیرقانونی سرگرمی پر نظر رکھے ہوئے تھے۔
پولیس کے معاون ترجمان خالد الکریدیس نے بتایا گروہ 9 افراد پر مشتمل تھا۔ ملزمان میں تین کا تعلق شام، تین کا مصر، ایک، ایک کا یمن پاکستان اور ترکی سے بتایا گیا ہے۔ یہ عمر کے تیسرے اور پانچویں عشرے میں ہیں۔ترجمان نے بتایا کہ گروہ میں شامل افراد سعودی شہریوں کے نام سے رجسٹرڈ تجارتی اداروں کے بینک کھاتوں کے ذریعے غیر قانونی طریقے سے رقوم بیرون مملکت بھجوا رہے تھے۔سعودی شہری کھاتوں کے ذریعے ترسیل زر کی سہولت پر گروہ سے کمیشن وصول کررہے تھے۔پولیس کے مطابق غیر ملکی گروہ کے پاس سے دس لاکھ 36 ہزار 182 ریال برآمد ہوئے ہیں۔ الکریدیس کا کہنا ہے کہ ہنڈی کا کاروبار کرنے والوں نے پوچھ گچھ کے دوران اقبال جرم کرلیا ہے۔ پوچھ گچھ کے بعد پبلک پراسیکیوشن کے حوالے کردیا گیا ہے۔واضح رہے کہ سعودی عرب میں چند روز قبل بھی چوری کی متعدد وارداتیں کرنے والے دو غیر ملکی کارکنان گرفتار کر لیے گئے ہیں، جن میں سے ایک کا تعلق پاکستان جبکہ دوسرے کا افغانستان سے ہے۔
قصیم پولیس کے ترجمان بدر الحیبانی نے بتایا کہ پکڑے جانے والے دونوں افراد بجلی کی کیبل اور دیگر سامان کی چوری کی متعدد وارداتیں کر چکے تھے۔ قصیم میں ایک عرصے سے کیبل چوری کی شکایات موصول ہو رہی تھیں۔ ملزمان کی گرفتاری کے لیے ایک پولیس ٹیم تشکیل دی گئی، جس نے ملزمان کو چوری کی واردات کے وقت رنگے ہاتھوں پکڑ لیا۔ دونوں افراد کی عمریں 30 سے 45 سال کے درمیان ہیں۔ ملزمان کے قبضے سے 17,450ریال، چوری کی گئی 510 کلو گرام کیبل اور دیگر سامان بھی برآمد ہوا ہے۔ ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر کے انہیں پبلک پراسیکیوشن کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.