متحدہ عرب امارات نے ریٹائرڈ غیر ملکیوں کیلئے “ریٹائرمنٹ ویزہ” سروس متعارف کروا دی

متحدہ عرب امارات نے بزرگ، ریٹائرڈ غیر ملکیوں کیلئے “ریٹائرمنٹ ویزہ” سروس متعارف کروا دی

55 سال سے زائد عمر کا کوئی بھی غیر ملکی نئی ویزہ سروس کے حصول کیلئے اہل ہوگا، خواہش مند شخص کی کم سے کم ماہانہ آمدن 20 ہزار درہم ہونی چاہیئے
دبئی متحدہ عرب امارات نے بزرگ، ریٹائرڈ غیر ملکیوں کیلئے “ریٹائرمنٹ ویزہ” سروس متعارف کروا دی، 55 سال سے زائد عمر کا کوئی بھی غیر ملکی نئی ویزہ سروس کے حصول کیلئے اہل ہوگا، خواہش مند شخص کی کم سے کم ماہانہ آمدن 20 ہزار درہم ہونی چاہیئے۔ تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات کی حکومت نے اپنے ملک میں سیاحت کو مزید فروغ دینے کیلئے نئے طرز کا ویزہ متعارف کروا دیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ نئی طرز کی ویزہ سروس کو ریٹائرمنٹ ویزہ کا نام دیا گیا ہے۔ دبئی کے حکمراں شیخ محمد بن راشد المکتوم کی جانب سے بدھ کے روز اس ویزہ اسکیم کو لانچ کیا گیا۔ بتایا گیا ہے کہ ہر وہ غیر ملکی بزرگ شہری جو ملازمت سے ریٹائر ہو چکا، یا اس کی عمر 55 سال سے زائد ہے، وہ ریٹائرمنٹ ویزہ حاصل کرنے کا اہل ہوگا۔ تاہم ریٹائرمنٹ ویزہ حاصل کرنے کیلئے مزید کچھ پیشگی شرائط پر بھی پورا اترنا ہوگا۔ بتایا گیا ہے کہ ریٹائرمنٹ ویزہ حاصل کرنے کے خواہش مند غیر ملکی شہری کیلئے لازم ہے کہ اس کی کم سے کم ماہانہ آمدن 20 ہزار درہم ہو، یا اس کے بینک اکاونٹ میں 10 لاکھ درہم کی رقم موجود ہے۔ یا اگر اس غیر ملکی شہری کے نام پر متحدہ عرب امارات میں 20 لاکھ درہم مالیت کی جائیداد موجود ہے، تو بھی یہ ریٹائرمنٹ ویزہ کیلئے اہل ہوگا۔ ریٹائرمنٹ ویزہ کی مدت 5 سال ہوگی۔ ویزہ ایکسپائر ہونے کی صورت میں اس کی تجدید کروانا ہوگی۔

Sharing is caring!

Comments are closed.