کویتی حکام کی جانب سے 5 ہزار پاکستانیوں کو رشوت لے کر ویزے جاری کیے گئے

کویتی حکام کی جانب سے 5 ہزار پاکستانیوں کو رشوت لے کر ویزے جاری کیے جانے کا انکشاف
کویت کے محکمہ داخلہ کی جانب سے 2014 سے 2018 کے درمیان ویزے جاری کیے گئے، تمام دستاویزات کی چھان بین شروع کر دی گئی

کویت کویتی حکام کی جانب سے 5 ہزار پاکستانیوں کو رشوت لے کر ویزے جاری کیے جانے کا انکشاف، کویت کے محکمہ داخلہ کی جانب سے 2014 سے 2018 کے درمیان ویزے جاری کیے گئے، تمام دستاویزات کی چھان بین شروع کر دی گئی۔ تفصیلات کے مطابق کویت میں بنگلہ دیشی رکن پارلیمںٹ شاہد اسلام اور اس کے کویتی ساتھی کی گرفتاری کے بعد منی لانڈرنگ، انسانی سمگلنگ اور اقاموں کے دھندے کے معاملے کی تحقیقات کے دوران مزید انکشافات ہوئے ہیں۔
بتایا گیا ہے کہ کویت کے محکمہ داخلہ کے اسسٹنٹ انڈر سیکرٹری کی جانب سے رشوت لے کر ناصرف بنگلہ دیشی شہریوں، بلکہ پاکستانیوں کو بھی ویزے جاری کیے گئے۔ بتایا گیا ہے کہ کویت کے محکمہ داخلہ کے اسسٹنٹ انڈر سیکرٹری کی جانب سے رشوت لے کر 5 ہزار پاکستانیوں کو ویزے جاری کیے گئے۔ یہ ویزے 2014 سے 2018 کے درمیان جاری کیے گئے۔ اب کویتی حکام کی جانب سے تمام دستاویزات کو اپنی تحویل میں لے لیا گیا ہے۔ کویتی حکام 2014 سے 2018 کے درمیان جاری کیے گئے ویزوں کی دستاویزات کی مکمل چھان بین کر رہے ہیں۔ محکمہ داخلہ کے جس اسسٹنٹ انڈر سیکرٹری کی جانب سے رشوت لے کر ویزے جاری کیے گئے، اسے گرفتار کیا جا چکا ہے۔ یہ شخص بنگلہ دیشی رکن پارلیمںٹ شاہد اسلام کا ساتھی بتایا جا رہا ہے۔ مزید بتایا گیا ہے کہ ناصرف بنگلہ دیشی اور پاکستانی، بلکہ دیگر کچھ ممالک کے شہریوں کو بھی رشوت لے کر اور غیر قانونی طور پر ویزے جاری کیے گئے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.