کورونا بُری طرح پھیل گیا۔۔!! اسلام آباد کے مزید علاقے سیل کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد( نیوز ڈیسک) وفاقی دارالحکومت کے مزید علاقے سیل کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے، تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کے سیکٹر آئی 8 سے ایک ہی دن میں 200 کیسز اور سیکٹر 10 سے 400 کیسز نکلنےپر اسلام آباد انتظامیہ نے سیکٹر آئی 8 اور سیکٹر 10 کو سیل کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے جس کا نوٹیفکیشن اگلے 24 گھنٹوں میں متوقع ہے۔اپنے ٹوئٹر

پیغام میں ڈپٹی کمشنر اسلام آباد نے بتایا کہ اسلام آباد میں بڑھتے ہوئے کیسس کی وجہ سے ہم سیکٹر آئی – 8 ( یہاں ایک دن میں دو سو کیسس نکلے ہیں ) اور سیکٹر آئی -10 ( یہاں ٹوٹل چار سو کیسس ہو چکے ہیں ) کو سیل کرنے کا پلان بنا رہے ہیں ۔ آگئے 24 گھنٹوں میں نوٹیفیکیشن ایشو ہو سکتا ہے ۔واضح رہے کہ اس سے قبل کرونا کی وبا پھیلنے پر کراچی کمپنی، سیکٹر جی نائن ٹو ، جی نائن اور جی نائن فور میں کرونا پھیلنے پر انہیں سیل کیا گیا تھا جبکہ ضلعی انتظامیہ غوری ٹاؤن ، آئی ٹین ون ، لوہی بھیر ، جی ایٹ ، آئی ایٹ کے علاقے بھی سیل کرنے پر غور کررہی ہے۔دوسری جانب بارہ کہو، جی سیون، جی سکس بھی کرونا کے ہاٹ سپاٹ بنتے جارہے ہیں جبکہ بارہ کہو کو مقامی انتظامیہ پہلے بھی ایک بار سیل کرچکی ہے جس کی وجہ سے وہاں کرونا کیسز میں کمی دیکھنے میں آئی تھی لیکن ایک بار پھر اس علاقے میں وبا نے سراٹھانا شروع کردیا ہے ۔اس سے فیصل آباد کو بھی سیل کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے، جن علاقوں کو سیل کیا جائے گا ان میں نثار کالونی، ستارہ کالونی، ایڈن گارڈن، النجف کالونی اور پیپلز کالونی نمبر 1 شامل ہیں۔حکومت کی جانب سے کیے جانے والے فیصلے کے تحت آفیسرز کالونی، رضا گارڈن، کچہری بازار اور مدینہ ٹاون سمیت دیگر علاقے بھی کورونا وائرس کی وجہ سے سیل کیے جائیں گے۔فیصل آباد میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 3800 سے زائد ہو چکی ہے جب کہ مہلک وبا کا نشانہ بن کر 92 افراد اپنی جانوں کی بازیاں بھی ہار چکے ہیں۔حکومتی فیصلے کے تحت آج رات سے لاہور کے 80 ہاٹ اسپاٹس علاقوں کو سیل کردیا جائے گا۔ یہ فیصلہ بھی عالمی وبا قرار دیے جانے والے کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر کیا گیا ہے۔پنجاب کی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے گزشتہ روز پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ کل رات 12 بجے سے لاہور کے بہت سے علاقوں کو بند کر دیا جائے گا۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد کا کہنا تھا کہ لاہور میں کورونا وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے اور وزیر اعظم نے ہدایت کی ہے کہ جہاں وائرس کا پھیلاؤ ہے وہاں اقدامات کریں۔ان کا کہنا تھا کہ لاہور کے زیادہ کیسز والے علاقوں میں مختلف حکمت عملی اپنائی جا رہی ہے۔ انہوں نے بتایا تھا کہ متاثرہ علاقے آئندہ دو ہفتوں تک بند رہیں گے۔پنجاب کی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد کا کہنا تھا کہ متعلقہ علاقوں میں کھانے پینے کی دکانیں اور میڈیکل اسٹورز کھلے رہیں گے۔صوبائی وزیر صحت نے عوام الناس سے اپیل کی تھی کہ وہ جاری کردہ ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کو یقینی بنائیں تاکہ کورونا وائرس کے پھیلاو¿ کو روکا جا سکے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.