پاکستانی صحافت کا ایک اور نام دُنیا سے رُخصت، پوری قوم افسردہ

لاہور(نیوز ڈیسک ) صحافت کے معروف پروفیسر ڈاکٹر مغیث الدین کورونا کے باعث انتقال کر گئے۔ لاہور سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر مغیث الدین کا شمار پاکستان کے ان چند پروفیسروں میں ہوتا ہے جنہوں نے کئی نامور صحافیوں کو پڑھایا اور وہ آج پاکستان کے میڈیا میں کام کر رہے ہیں۔

لاک ڈاؤن سے قبل ڈاکٹر مغیث الدین حال ہی میں یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی میں بطور سربراہ اسکول آف میڈیا اینڈ کمیونیکیشن اسٹڈیز اپنے فرائض سرانجان دے رہے تھے۔اس سے قبل بھی وہ کئی پاکستانی یونیوسٹیوں میں پڑھا چکے ہیں جس میں جامعہ پنجاب اور یونیورسٹی آف سینٹرل پنجاب بھی شامل ہیں۔ شعبہ صحافت بے شمار ایسے لوگ موجود ہیں جوڈاکٹر مغیث الدین نے ٹریننگ لینے کے بعد آج کسی نہ کسی اچھے مقام پر پہنچ گئے ہیں۔لیکن آج یہ افسوس ناک خبر موصول ہوئی ہے جس کے مطابق صحافت کے معروف پروفیسر ڈاکٹر مغیر الدین کورونا کے باعث انتقال کر گئے ہیں۔خیال رہے کہ پاکستان بھی اس وقت پوری دنیا کی طرح کورونا وائرس کجی لپیٹ میں آچکا ہے جس کے بعد ہم نے کئی ناموری شخصیات کو اس کا نشانہ ہو کر اس دنیا سے رخصت ہوتے ہوئے دیکھا ہے۔ پاکستان میں کورونا کی صورتحال کا جائزہ لیا جائے تو تازہ اعداد و شمار کے مطابق ملک بھر میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا کے باعث 60 افراد جاں بحق ہوئے جو کہ گزشتہ کئی روز کے مقابلے میں یومیہ اموات کی نسبتاََ کم تعداد ہے۔22 جون کو بھی پاکستان میں کورونا وائرس کے نئے رپورٹ ہونے والے کیسز کی تعداد 19 دنوں کی کم ترین سطح پر تھے۔ تازہ اعداد و شمار کے مطابق پاکستان میں گزشتہ روز 3 ہزار 892 نئے کیسز رپورٹ ہوئے جو کہ گزشتہ 20 دنوں کے دوران رپورٹ ہونے والے یومیہ کیسز کی سب سے کم ترین تعداد ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق نیشل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزرنے والے 24 گھنٹوں میں 23 ہزار سے زائد کورونا کے ٹیسٹ کیے گئے ہیں جس میں سے 3 ہزار 892 افراد میں وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔اسی کے ساتھ ملک بھر میں کورونا کے مریضوں کی مجموعی تعداد 1 لاکھ 88 ہزار 926 ہو گئی ہے۔ پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی کل تعداد میں سے 75 ہزار 238 افراد صحت یاب بھی ہو چکے ہیں۔ ادارے کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ گزشتہ روز 60 افراد کورونا کے باعث جاں بحق ہوئے ہیں جس کے بعد ملک بھر میں کورونا سے ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 3 ہزار 755 ہو گئی ہے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.